عدم اعتماد کا حصہ بننے کی آفر کس نے دی؟ سراج الحق کا تہلکہ خیز انکشاف

  پیر‬‮ 5 دسمبر‬‮ 2022  |  14:31

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک ، این این آئی)امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے انکشاف کیا ہے کہ آصف زرداری نے پی ٹی آئی کے خلاف ہم سے مدد مانگی تھی ، مگر ہم نے انکار کر دیا۔تفصیلات کے مطابق تاندلیانوالہ میں اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے سراج الحق نے کہا کہ ہمیں موقع ملا تو کرپشن کرنےوالوں کو تباہ کر دیں گے ، تمام سیاسی جماعتیں دھوکہ باز ہیں۔

کبھی روٹی کپڑے کے نام پر دغا دیا گیا تو کسی نے تبدیلی کے نام پر گمراہ کیا ۔ میرے پاس زرداری اور شہباز شریف آئے کہ ہمارا ساتھ دیں تا کہ پی ٹی آئی کا خاتمہ ہو ۔سراج الحق نے کہا کہ پی ڈی ایم اور پی ٹی آئی ایک بار بھی کمشیر سے متعلق مودی سے بات نہیں کر سکی ، جماعت اسلامی کشمیر کو آزاد کرائے گی ، صرف جماعت اسلامی ہی ملک کو کرپشن فری بنا سکتی ہے۔علاوہ ازیں منصورہ میں مرکزی نظم کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے کہا ہے کہ قومی انتخابات میں تاخیر کی باتیں قوم کو منظور نہیں، الیکشن سے قبل انتخابی اصلاحات ضروری ہیں،سیاسی جماعتیں سویلین بالادستی، الیکشن ریفارمز اور اسٹیبلشمنٹ کے سیاست سے دور رہنے کے اعلان کی روشنی میں میکنزم کی تیاری کے لیے مذاکرات کا آغاز کریں، تین نکاتی ایجنڈے پر نئے سماجی معاہدہ سے سیاسی عدم استحکام ختم ہو گا، بغیر اصلاحات الیکشن کے نتائج کوئی تسلیم نہیں کرے گا، انتخابات متناسب نمائندگی کے اصول کے تحت ہونے چاہئیں ،معیشت کی بہتری کے لیے سود اور کرپشن سے نجات حاصل کرنا ہوگی، حکمران جماعتیں ملک میں سیاسی و معاشی استحکام نہیں، سٹیٹس کو چاہتی ہیں، اسی میں ان کا فائدہ ہے، عدالتیں اور نیب لوٹ مار کرنے والوں کو نہیں پوچھتیںتو عوام ووٹ کی طاقت سے لٹیروں کا احتساب کرے، جماعت اسلامی ملک میں اسلامی نظام کے لیے جدوجہد کر رہی ہے، حکمران جماعتوں کے پیش نظر دولت اور جائیدادیں بنانا ہے۔



موضوعات:

زیرو پوائنٹ

بشریٰ بی بی سے شادی

عون چودھری 2010ء سے 2018ء تک سائے کی طرح عمران خان کے ساتھ رہے‘ یہ رات کے وقت انہیں ملنے والے آخری اور صبح ملاقات کے لیے آنے والے پہلے شخص ہوتے تھے چناں چہ یہ عمران خان کی زندگی کے اہم ترین دور کے اہم ترین شاہد ہیں‘ مجھے چند دن قبل عون چودھری نے اپنے گھر پر ناشتے ....مزید پڑھئے‎

عون چودھری 2010ء سے 2018ء تک سائے کی طرح عمران خان کے ساتھ رہے‘ یہ رات کے وقت انہیں ملنے والے آخری اور صبح ملاقات کے لیے آنے والے پہلے شخص ہوتے تھے چناں چہ یہ عمران خان کی زندگی کے اہم ترین دور کے اہم ترین شاہد ہیں‘ مجھے چند دن قبل عون چودھری نے اپنے گھر پر ناشتے ....مزید پڑھئے‎