پی آئی سی حملے کی تحقیقاتی کمیٹی کے سربراہ نے اپنی سفارشات مرتب کر لیں، ابتدائی رپورٹ بھی تیار،انتظامی غفلت کا بھی انکشاف

  اتوار‬‮ 15 دسمبر‬‮ 2019  |  18:56

لاہور (آن لائن) پنجاب انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی پر وکلا کے حملے کی تحقیقات کرنے والی کمیٹی کے سربراہ وزیر قانون پنجاب راجہ بشارت نے اپنی سفارشات مرتب کرلی ہیں، جو پیر کے دن وزیر اعلیٰ پنجاب کو ارسال کی جائیں گی۔پی آئی سی میں وکلا کے حملے کی ابتدائی رپورٹ تیا ر کر لی گئی ہےجو پیر کے دن وزیر اعلیٰ پنجا ب سردار عثما ن بزدار کو وزیرقانون پنجا ب راجہ بشارت پیش کریں گے۔میڈیا رپو ر ٹس کے مطابق واقعے کے بعد صورت حال کے جائزے کے لیے طلب کئے گئے پہلے اجلاس میں ہی پولیس کے


اعلی حکام کی وزیر قانون کی جانب سے سرزنش کی گئی تھی، وہ اس بات پر برہم تھے کہ پولیس نے دو گھنٹے تک وکلا کو روکنے کی کوئی حکمت عملی ہی نہیں بنائی اور نہ ہی انہیں روکنے کی کوئی کوشش کی۔ اس کے علاوہ وزیراعلی کی زیرصدارت اعلیٰ ترین اجلاسوں میں بھی انتظامی غفلت پر اظہار ناراضی کیا گیا، راجہ بشارت کی سفارشات کی روشنی میں پولیس کے متعلقہ اعلی حکام کی غفلت کی بھی الگ سے انکوائری کاامکان ہے۔واضح رہے کہ گزشتہ ہفتے وکلا نے ڈاکٹروں سے تصادم کے بعد پی آئی سی پر حملہ کردیا تھا۔ واقعے میں کئی مریض اپنی جان سے ہاتھ دھوبیٹھے تھے تاہم پنجاب حکومت نے 3 افراد کے جاں بحق ہونے کی تصدیق کی تھی لیکن گزشتہ روز ایک اور شخص کے جاں بحق ہونے کی تصدیق کر دی گئی تھی۔  پنجاب انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی پر وکلا کے حملے کی تحقیقات کرنے والی کمیٹی کے سربراہ وزیر قانون پنجاب راجہ بشارت نے اپنی سفارشات مرتب کرلی ہیں، جو پیر کے دن وزیر اعلیٰ پنجاب کو ارسال کی جائیں گی۔پی آئی سی میں وکلا کے حملے کی ابتدائی رپورٹ تیا ر کر لی گئی ہے جو پیر کے دن وزیر اعلیٰ پنجا ب سردار عثما ن بزدار کو وزیرقانون پنجا ب راجہ بشارت پیش کریں گے۔

موضوعات: