قاضی فائزعیسیٰ کیخلاف ریفرنس،حکومت نے قانونی تقاضے پورے نہیں کیے،ریفرنس دائر کرنے کی اصل وجہ کیا ہے؟سابق چیف جسٹس افتخارچودھری نے بڑا دعویٰ کردیا

  بدھ‬‮ 12 جون‬‮ 2019  |  23:46

لاہور (آن لائن) سابق چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری نے کہا ہے کہ حکومت کی جانب سے دائر کیے جانے والا ریفرنس بد نیتی پر مبنی ہے پاکستان کے تمام وکلا اس معاملے پر یکسو ہے سابق چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری اپنی سیاسی پارٹی کے رہنما رائے طاہر کے بھائی کی وفات پر ان کے گھر تعزیت کے لیے تشریف لائےاس موقع ایڈووکیٹ مدثر چوہدری (سابق کوآرڈینیٹر پاکستان بار کونسل)عدنان رؤف ایڈووکیٹ اور سیاسی سماجی شخصیات موجود تھیں۔ سابق جسٹس نے کہا کہ حکومت کی جانب سے سپریم کورٹ کے جج جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کے خلاف دائر کیا


جانے والا ریفرنس بد نیتی پر مبنی ہے ریفرنس دائر کرنے سے قبل حکومت نے قانونی تقازے پورے نہیں کیے وزیر اعظم اور صدر پاکستان کابینہ کی منظوری کے بغیر سپریم کے جج کے خلاف ریفرنس دائر نہیں کر سکتے۔ سابق چیف جسٹس نے کہا کہ قاضی فائزعیسیٰ کے معاملے پر تمام ایک ساتھ کھڑے ہیں اور کبھی وکلا کے دھڑوں میں تقسیم نہیں ہوئے۔سابق چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری نے کہا کہ مہنگائی نے عام آدمی کی مشکلات میں مزید اضافہ کر دیا جس سے حکومت کی نااہلی واضح ہو گئی ہے چیف جسٹس نے کہا کہ ہر روز ڈالر کی قیمت بڑھ رہی ہے اور حکومت ڈالر کی قیمت کنٹرول کرنے میں ناکام ہو گئی ہے۔ سابق چیف جسٹس پاکستان افتخار محمد چوہدری کا کہنا ہے حکومت کو عام آدمی کی زندگی کو بہتر بنانے کے لیے اقدامات کرنے چاہئیں۔

موضوعات:

loading...