نیٹو فورسز کے خطہ سے نکلنے کے بعد بھارت کشمیر پر قبضہ برقرار نہیں رکھ سکے گا، حافظ سعیدنے دبنگ اعلان کردیا

  ہفتہ‬‮ 12 جنوری‬‮ 2019  |  17:11

فیصل آباد(آن لائن)امیر جماعۃ الدعوۃ پاکستان پروفیسر حافظ محمد سعیدنے کہا ہے کہ وزیر اعظم عمران خان نے پاکستان کو مدینہ کی طرز پر ریاست بنانے کا اعلان کیا تھا وہ اگر ایسا چاہتے ہیں تو ملک میں نظام مصطفیٰ نافذ کریں اور بیرونی قوتوں کے دباؤ سے نکل کرسودی قرضوں کا سلسلہ بند کیا جائے۔جب ایسا کریں گے تو مدینہ کی طرز پرریاست بنے گی۔ نیٹو فورسز کے خطہ سے نکلنے کے بعد بھارت بھی کشمیر پر قبضہ برقرار نہیں رکھ سکے گا۔آزادی کشمیر کی منزل قریب ہے۔ فرقہ واریت امت مسلمہ کیلئے زہر قاتل ہے۔ بیرونی سازشوں کے

توڑ کیلئے اتحادویکجہتی کا ماحول پیدا کرنا انتہائی ضروری ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جامع مسجدخیبر نشاط آباد فیصل آبادمیں ایک اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔حافظ محمد سعید نے کہا کہ مسلمانوں کے پاس اتنے علاقے تھے کہ سورج طلوع بھی مسلمانوں کی سلطنت میں ہوتا اورغروب بھی ،لیکن حالات کے تقاضوں سے متاثر ہوکر مسلمان کافروں کے تابع ہوئے جس کا نقصان ہو ا۔ جتنی صدیاں بھی گزر جائیں نبی حضرت محمد ﷺ ہی رہیں گے۔ہمیں ان کے راستے پر چلنا ہے تبھی کامیابی ملے گی ۔ فرقوں کو چھوڑ کر نبی کریم ﷺ کی جماعت بنیں اور صحابہ کرام رضوان اللہ علیہم اجمعین کے نقش قدم پر چلیں انہوں نے کہا کہ دین کے مطابق چلنے والوں پر مشکلات اور رکاوٹیں آتی ہیں جس کادین مضبوط ہوا س پر سب سے زیادہ آزمائشیں آتی ہے۔آزمائشوں پر صبر کرنا چاہئے۔پاکستان کو مدینہ کی طرز پر ریاست بنانے کیلئے ملک میں نظام مصطفی نافذ کیا جائے۔ مسلمان سیرت رسول ﷺ کے مطابق زندگی بسر کریں۔ سودی قرضوں سے ملکی معیشت کو نقصان پہنچ رہا ہے‘ ملکی معیشت کو اسلامی بنیادوں پر استوار کیا جائے۔انہوں نے کہا کہ امریکہ نے افغانستان میں شکست کا اعتراف کر لیا۔اب وہ انڈیاکو کہتا ہے کہ ہم افغانستان میں کیوں لڑیں؟۔اس وقت صورتحال یہ ہے کہ امریکہ کی معیشت برباد ہو رہی ہے۔اس کے افغانستان سے نکلنے کے بعد انڈیا بھی کشمیرپر اپنا غاصبانہ قبضہ برقرار نہیں رکھ سکے گا۔

موضوعات:

آج کی سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں