ملک بھر میں دو عیدوں کی روایت برقرار رہنے کے امکانات

  اتوار‬‮ 18 جون‬‮ 2017  |  15:21

اسلام آباد(آن لائن) ملک بھر میں دو عیدوں کی روایت برقرار رہنے کے امکانات بڑھ گئے ہیں خیبر پختونخوا کی مسجد قاسم علی خان سمیت زونل رویت ہلال کمیٹیوں کے اجلاس مرکزی رویت ہلال کمیٹی کے اجلاس سے ایک روز پہلے طلب کر لئے گئے ہیں اور چاند نظر آنے کی شہادت موصول ہونے کی صورت میں 25جون کو خیبر پختونخوا کے اکثریتی اضلاع میں عید الفطر منائی جائے گی ۔ذرائع کے مطابق خیبر پختونخوا کی مسجد

قاسم علی خان سمیت زونل رویت ہلال کمیٹیوں کے اجلاس 25 جون کی بجائے 24 جون کو طلب کئے گئے


ہیں کیونکہ خیبر پختونخوا کے اکثریتی اضلاع میں رمضان المبارک کا آغاز27 مئی بروزہ ہفتہ سے ہوا تھا اور اسی مناسبت سے 29 رمضان 24جون کو آتا ہے جبکہ مرکزی رویت ہلال کمیٹی کا اجلاس پشاؤرمیں 25جون کو طلب کیا گیا ہے ذرائع کے مطابق اگر 24 جون کو مسجد قاسم علی خان سمیت اگر کسی بھی زونل رویت ہلال کمیٹی میں عید الفطر کے چاند کی شہادت 24جون کو موصول ہوگئی تو 25 جون کو عید الفطر منائی جائے گی ذرائع کے مطابق وزارت مذہبی امور کی جانب سے خیبر پختونخوا کی غیر سرکاری رویت ہلال کمیٹی جو کہ مسجد قاسم علی خان میں بیٹھتی ہے کو 25جون کے اجلاس میں اپنا نمائندہ بھیجنے کی دعوت دی گئی ہے جس کے جواب میں مسجد قاسم علی خان کی جانب سے 24جون کے اجلاس میں حکومتی نمائندہ بھیجنے کا مطالبہ کیا گیا تاہم اس مطالبے پر وزارت کی جانب سے کوئی ردعمل نہیں دیا گیا ہے واضح رہے کہ گذشتہ سال بھی وزارت مذہبی امور کی جانب سے ملک بھر میں عید الفطر ایک ساتھ منانے کیلئے کوششیں کی گئی تھی اور عید الفطر سے چند روز قبل مسجد قاسم علی خان کے خطیب مولانا شہاب الدین پوپلزئی کو سرکاری سطح پر عمرہ ادائیگی کیلئے بھجوا دیا گیا تھا جس کیو جہ سے مسجد قاسم علی خان کی جانب سے ایک روز قبل اعلان نہ

ہوسکا مگر امسال وزارت مذہبی امور کی جانب سے ملک بھر میں ماہ صیام اور عید الفطر کو ایک ہی روز منانے کیلئے کسی قسم کی پیش رفت نہیں کی گئی جس کی وجہ سے مسجد قاسم علی خان کی جانب سے شہادتیں موصول ہونے کے بعد رمضان المبارک کا اعلان کر دیا گیا ذرائع کے مطابق سینٹ اور قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹیوں نے رویت ہلال کمیٹی کے حوالے سے وزارت مذہبی امور کی جانب سے پیش کئے جانے والے رویت ہلال کمیٹی کی تشکیل نو کے حوالے سے بل پر غور کیا جارہا ہے جس کے بعد رویت ہلال کمیٹی کے موجودہ چیرمین جو کہ گذشتہ 10سالوں سے براجمان ہیں سمیت تمام ممبران کو ختم کرکے نئی کمیٹی تشکیل دی جائے گی ذرائع کے مطابق اگر 24جون کو مسجد قاسم علی خان سمیت صوبے کی کسی بھی زونل رویت ہلال کمیٹی کی جانب سے چاند نظر آنے کی شہادتیں موصول ہوگئی اور صوبے کی سطح پر 25جون کو عید الفطر کا اعلان کیا تو 25جون کو پشاؤر میں ہونے والا مرکزی رویت ہلال کمیٹی کا اجلاس بے معنی ثابت ہوگا۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

آخری موو

سینیٹ کا الیکشن کل اور پلاسی کی جنگ 23 جون 1757ءکو ہوئی اور دونوںنے تاریخ پر اپناگہرا نقش چھوڑا‘ بنگال ہندوستان کی سب سے بڑی اور امیر ریاست تھی‘پورا جنوبی ہندوستان نواب آف بنگال کی کمان میں تھا‘ سراج الدولہ بنگال کا حکمران تھا‘ دوسری طرف لارڈ رابرٹ کلائیو کمپنی سرکار کی فوج کا کمانڈر تھا‘ انگریز کے ....مزید پڑھئے‎

سینیٹ کا الیکشن کل اور پلاسی کی جنگ 23 جون 1757ءکو ہوئی اور دونوںنے تاریخ پر اپناگہرا نقش چھوڑا‘ بنگال ہندوستان کی سب سے بڑی اور امیر ریاست تھی‘پورا جنوبی ہندوستان نواب آف بنگال کی کمان میں تھا‘ سراج الدولہ بنگال کا حکمران تھا‘ دوسری طرف لارڈ رابرٹ کلائیو کمپنی سرکار کی فوج کا کمانڈر تھا‘ انگریز کے ....مزید پڑھئے‎