2008سے 2022کے دوران وزرائے اعظم کے کیمپس آفسز پر26.014ملین روپے کے اخراجات،2019سے 2022 کے عمران خان دور کے اخراجات صفر، تہلکہ خیز انکشاف

  منگل‬‮ 17 جنوری‬‮ 2023  |  18:43

اسلام آباد(این این آئی)2008سے 2022کے دوران مختلف وزرائے اعظم کے کیمپس آفسز پر26.014ملین روپے کے اخراجات آئے،2008-2012کے دوران کیمپس آفسز پر16.308ملین روپے،2013-2018کے دوران 9.706ملین روپے کے اخراجات آئے۔ وزیر انچارج برائے وزیراعظم آفس نے تحریری طور پر سینیٹ

کو آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ 2008-2012کے دوران سید یوسف رضا گیلانی کے وزارت عظمیٰ کے دوران اسٹیٹ گیسٹ ہاؤس لاہور اور182&189-Yڈی ایچ اے لاہور کے کیمپس آفسز پر 10.801ملین روپے،راجہ پرویز اشرف کے وزارت عظمیٰ کے دوران سانگھڑ ہاؤس، چکوال روڈ کیمپ آفس پر 5.507ملین روپے کے اخراجات آئے۔ سال 2013-2018کے دوران محمد نواز شریف کے وزارت عظیٰ کے دوران جاتی امراء، لاہور کیمپ آفس پر4.544ملین روپے اور شاہد خاقان عباسی کے وزارت عظمیٰ کے دورانH#4 street17,F-7/2اسلام آباد کیمپس آفس پر 5.162ملین روپے کے اخراجات آئے ہیں۔ وزیر انچار ج وزیراعظم آفس کے مطابق سابق وزیراعظم عمران خان نے کوئی کیمپ آفس قائم نہیں کیا اور سال2019-2022کے دوران وزیراعظم کیمپ آفس پر اخراجات صفر ہے۔ وزیر انچار وزیراعظم آفس نے تحریری طور پر ایوان کو آگاہ کیا کہ کابینہ ڈویڑن کے مطابق2019-21کے دورانVVIPہیلی کاپٹر مشینوں پر وزیراعظم دفتر(انٹرنل)ہدایات کے تحت6ایوی ایشن اسکوارڈن کی طرف 946.3ملین رقم خرچ کی گئی۔



موضوعات:

زیرو پوائنٹ

اب تو آنکھیں کھول لیں

یہ14 جنوری کی رات تھی‘ پشاور کے سربند تھانے پر دستی بم سے حملہ ہو گیا‘ دھماکا ہوا اور پورا علاقہ لرز گیا‘ وائر لیس پر کال چلی اور ڈی ایس پی سردار حسین فوری طور پر تھانے پہنچ گئے‘ ان کے دو محافظ بھی ان کے ساتھ تھے‘یہ لوگ گاڑی سے اترے‘ چند قدم لیے‘ دور سے فائر ہوا‘سردار ....مزید پڑھئے‎

یہ14 جنوری کی رات تھی‘ پشاور کے سربند تھانے پر دستی بم سے حملہ ہو گیا‘ دھماکا ہوا اور پورا علاقہ لرز گیا‘ وائر لیس پر کال چلی اور ڈی ایس پی سردار حسین فوری طور پر تھانے پہنچ گئے‘ ان کے دو محافظ بھی ان کے ساتھ تھے‘یہ لوگ گاڑی سے اترے‘ چند قدم لیے‘ دور سے فائر ہوا‘سردار ....مزید پڑھئے‎