انگلینڈ اور نیوزی لینڈ کا میچ ورلڈ کپ کی تاریخ کا بہترین فائنل تھا،وسیم اکرم

  پیر‬‮ 15 جولائی‬‮ 2019  |  15:45

لندن (این این آئی)قومی ٹیم کے سابق کپتان وسیم اکرم نے انگلینڈ اور نیوزی لینڈ کے میچ کو ورلڈکپ کی تاریخ کا اب تک کا بہترین فائنل قرار دیدیا۔گزشتہ روز لارڈز کے تاریخی میدان میں کھیلے گئے کرکٹ ورلڈکپ 2019 کے فائنل میں انگلینڈ نے سنسنی خیز مقابلے کے بعد نیوزی لینڈ کوسپر اوور میں شکست دیکر پہلی بار کرکٹ کا چیمپئن ہونے کا اعزاز حاصل کیا۔انگلینڈ کی شاندار کامیابی پر قومی ٹیم کے سابق کپتان وسیم اکرم نے کہا کہ انہوں نے ورلڈ کپ کا ایسا فائنل کبھی نہیں دیکھا، میچ کے دوران کبھی انگلینڈ تو کبھی نیوزی لینڈ


فیورٹ لگا۔قومی ٹیم کے سابق کپتان محمد یوسف نے کہا کہ دونوں ٹیموں کی جتنی بھی تعریف کی جائے کم ہے، فائنل کرکٹ کے لیے یہ بہترین میچ تھا۔ پاکستان کے سابق آل راؤنڈر عبدالرزاق نے کہا کہ دونوں ٹیموں نے بہترین کھیلا۔سابق کپتان مصباح الحق نے نیوزی لینڈ اور انگلینڈ کے سنسنی خیز فائنل میں فاتح ٹیم انگلینڈ کو مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ اصل چمپئن بین اسٹوکس ہے۔محمد حفیظ نے کہا کہ ورلڈ چمپئن بننے پر انگلش کو مبارکباد پیش کرتا ہوں جبکہ قومی ٹیم کے فاسٹ بولر وہاب ریاض کا کہنا تھا کہ نیوزی لینڈ نے بہت اچھا مقابلہ کیا لیکن بد قسمتی سے ہار گیا۔وکٹ کیپر بلے باز کامران اکمل نے کہا کہ نیوزی لینڈ نے جیت کے لیے بہت محنت کی لیکن قسمت نے ساتھ نہ دیا۔احمد شہزاد نے انگلش ٹیم کی کارکردگی کو سراہتے ہوئے کہا کہ انگلینڈ کی ٹیم جیت کی مستحق تھی، اس نے ورلڈ کپ جیتنے کیلئے بہت محنت کی تھی۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

قاسم پاشا کی گلیوں میں

آیا صوفیہ کے سامنے دھوپ پڑی تھی‘ آنکھیں چندھیا رہی تھیں‘ میں نے دھوپ سے بچنے کے لیے سر پر ٹوپی رکھ لی‘ آنکھیں ٹوپی کے چھجے کے نیچے آ گئیں اور اس کے ساتھ ہی ماحول بدل گیا‘ آسمان پر باسفورس کے سفید بگلے تیر رہے تھے‘ دائیں بائیں سیکڑوں سیاح تھے اور ان سیاحوں کے درمیان ....مزید پڑھئے‎

آیا صوفیہ کے سامنے دھوپ پڑی تھی‘ آنکھیں چندھیا رہی تھیں‘ میں نے دھوپ سے بچنے کے لیے سر پر ٹوپی رکھ لی‘ آنکھیں ٹوپی کے چھجے کے نیچے آ گئیں اور اس کے ساتھ ہی ماحول بدل گیا‘ آسمان پر باسفورس کے سفید بگلے تیر رہے تھے‘ دائیں بائیں سیکڑوں سیاح تھے اور ان سیاحوں کے درمیان ....مزید پڑھئے‎