سینیٹر شیری رحمان نے حکومت کے مہنگائی کے اعداد وشمار کو مشکوک قرار دے دیا

  بدھ‬‮ 4 اگست‬‮ 2021  |  16:12

اسلام آباد (این این آئی)نائب صدر پیپلز پارٹی سینیٹر شیری رحمان نے حکومت کے مہنگائی کے اعداد وشمار کو مشکوک قرار دے دیا۔ اپنے بیان میں شیری رحمن نے کہاکہضروری اشیائے خورونوش جیسے آٹا، چینی، گھی اور دیگر کی قیمتوں میں اضافا کیا گیا، بجلی، پیٹرول اور گیس پر آسمان چھونے والے ٹیکس لگائے گئے۔ انہوںنے کہاکہ اب پی ٹی آئی حکومت یہ دعویٰ کیسے کر سکتی ہے کہ جولائی میں مہنگائی 8.4 فیصد تک کم ہو گئی ہے؟ حکومت قوم کو گمراہ کرنے کے لیے مشکوک اعداد و شمار پیش کر رہی ہے، ایک ماہ میں پیٹرول کی قیمتوں


میں 3 بار اضافہ کیا گیا۔ انہوںنے کہاکہ تباہی سرکار کے اقتدار میں آنے سے پہلے پیٹرول 88 روپے لیٹر تھا جو اب 120 روپے لیٹر ہو چکا ہے، ہفتہ وار مہنگائی کی شرح 12.20 رہی۔ انہوںنے کہاکہ جولائی میں بنیادی اشیاء کی قیمتوں میں 15 سے 23 فیصد اضافہ ہوا،گزشتہ ایک ہفتے کے دوران 23 اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں اضافہ ریکارڈ کیا گیا، اس حکومت نے غریبوں کے لئے یوٹیلٹی اسٹورز کے دروازے بھی بند کر دئے ہیں، یہ کس منہ سے کہتے ہیں مہنگائی میں کمی ہوئی ہے؟


زیرو پوائنٹ

الیکشن کمیشن میں کیا ہو رہا ہے؟

میں اگر چیف الیکشن کمشنر سکندر سلطان راجہ کی ایک فقرے میں تشریح کروں تو یہ کہہ دینا کافی ہو گا ’’حکومت غلط آدمی سے ٹکرا گئی ہے‘ اس لڑائی میں صرف ایک فریق کو نقصان ہو گا اور وہ ہو گی حکومت ‘‘۔سکندر سلطان راجہ بھیرہ کے قریب چھوٹے سے گائوں چھانٹ میں پیدا ہوئے‘ گائوں میں بجلی تھی‘ ....مزید پڑھئے‎

میں اگر چیف الیکشن کمشنر سکندر سلطان راجہ کی ایک فقرے میں تشریح کروں تو یہ کہہ دینا کافی ہو گا ’’حکومت غلط آدمی سے ٹکرا گئی ہے‘ اس لڑائی میں صرف ایک فریق کو نقصان ہو گا اور وہ ہو گی حکومت ‘‘۔سکندر سلطان راجہ بھیرہ کے قریب چھوٹے سے گائوں چھانٹ میں پیدا ہوئے‘ گائوں میں بجلی تھی‘ ....مزید پڑھئے‎