پی آئی اے اور دیگر ملکی ایئرلائنز پر یورپی پابندیوں میں توسیع کا خدشہ ، سول ایوی ایشن کی بڑی ناکامی

  بدھ‬‮ 28 اکتوبر‬‮ 2020  |  23:39

کراچی(این این آئی) سول ایویشن اتھارٹی(سی اے اے)کی بدانتظامی کے باعث قومی اور دیگر ایئرلائنز پر عائد یورپی پابندیوں میں مزید توسیع کا خدشہ ہے۔سی اے اے ستمبر میں ہونے والے بین الاقوامی سول ایوی ایشن آرگنائزیشن (اکا) کاآڈٹ کرانے میں ناکام ہوگئی۔ تیاری نہ ہونے کے باعث سی اے اے نے انٹرنیشنل سول ایویشن آرگنائزیشن (اکا)سے آڈٹ ستمبر کی بجائے دسمبر میں کروانے کی درخواست کی ہے۔اکا نے سی اے اے کی درخواست مسترد کرتے ہوئے یہ آڈٹ مارچ یا جولائی2021 میں کرنے کی نئی تاریخ دیدی۔ جس کے نتیجے میں یورپی یونین کی عائد سفری پابندیاں آئندہ سال


تک توسیع کا خدشہ پیدا ہوگیا ہے۔آئیاٹا اور اکا آڈٹ کے بغیر یورپی سفری پابندیاں ختم نہیں ہو سکتیں۔ قومی فضائی کمپنی سمیت ساری ملکی ایئرلائنز اس آڈٹ کے کلیئر ہونے کے انتظار میں تھیں۔پی آئی اے کا آئیاٹا آڈٹ کلئیر کرلیا گیا ہے لیکن سی اے اے کا ستمبر میں ہونے والا اکا آڈٹ نہیں ہوسکا۔ یورپی یونین ایئر سیفٹی ایجنسی نے پی آئی اے پر چھ ماہ کی سفری پابندیاں عائد کررکھی ہیں۔یہ آڈٹ پائلٹس اسکینڈل کے بعد سول ایوی ایشن کی بین القوامی قوانین کے ساتھ ہم آہنگی اور صلاحیت جانچنے کیلئے کیا جارہا ہے۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

بڑے چودھری صاحب

انیس سو ساٹھ کی دہائی میں سیالکوٹ میں ایک نوجوان وکیل تھا‘ امریکا سے پڑھ کر آیا تھا‘ ذہنی اور جسمانی لحاظ سے مضبوط تھا‘ آواز میں گھن گرج بھی تھی اور حس مزاح بھی آسمان کو چھوتی تھی‘ یہ بہت جلد کچہری میں چھا گیا‘ وکیلوں کے ساتھ ساتھ جج بھی اس کے گرویدا ہو گئے‘ اس ....مزید پڑھئے‎

انیس سو ساٹھ کی دہائی میں سیالکوٹ میں ایک نوجوان وکیل تھا‘ امریکا سے پڑھ کر آیا تھا‘ ذہنی اور جسمانی لحاظ سے مضبوط تھا‘ آواز میں گھن گرج بھی تھی اور حس مزاح بھی آسمان کو چھوتی تھی‘ یہ بہت جلد کچہری میں چھا گیا‘ وکیلوں کے ساتھ ساتھ جج بھی اس کے گرویدا ہو گئے‘ اس ....مزید پڑھئے‎