ذخیرہ اندوزوں اور منافع خوروں کو عید پر بھی چین نہ آیا، یوٹیلٹی سٹوروں پر بھی چینی غائب، انتہائی افسوسناک صورتحال

  جمعہ‬‮ 31 جولائی‬‮ 2020  |  22:24

پاکپتن ( آن لائن ) پاکپتن اور عارفوالا میں یوٹیلٹی سٹوروں سے چینی غائب ہو گئی۔ایک یوٹیلٹی سٹور ملازم سے پوچھنے پر اس نے بتایا کہ چینی کئی دنوں سے غائب بار بار انتظامیہ لکھنے کے باوجود چینی مہیا نہیں کی جا رہی۔ ضلع پاکپتن میں پاکپتن اور عارفوالا کے مین بازاروں اور مارکیٹوں سے چینی غائب ہو گئی۔تاجروں کے مطابق انتظامیہ کی طرف سے ان کو 70روپے فی کلو چینی فروخت کرنے پر مجبور کیا جا رہا ہے۔ اور ایسا نہ کرنے پر بھاری جرمانے کئےجا رہے ہیں جبکہ دوسری طرف شوگر ملز مافیا نے کریانہ سٹوروں کو.50 78روپے


فی کلو چینی فروخت اب ان کو 70روپے فی کلو چینی فروخت کرنے پر مجبور کیا جا رہا ہے۔ اور ایسا نہ کرنے پر بھاری جرمانے کئے جا رہے ہیں۔شوگر ملز مافیا ملتان ،لوھراں وغیرہ میں 70روپے فی کلو چینی فروخت کے سٹالز لگا کر عدالتوں کو دھوکا دے رہا ہے۔ بعض کریانہ سٹوروں پر 85 روپے فی کلو چینی سے 90 روپے فی کلو چینی روپے فی کلو فروخت کی رہی ہے۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

روکا روکی کا کھیل

میں آج سے چھ سال پہلے بائی روڈ اسلام آباد سے ملتان گیا تھا‘ وہ سفر مشکل اور ناقابل برداشت تھا‘ رات لاہور رکنا پڑا‘ اگلی صبح نکلے تو ملتان پہنچنے میں سات گھنٹے لگ گئے‘ سڑک خراب تھی اور اس کی مرمت جاری تھی لہٰذا گرمی‘ پسینہ اور خواری بھگتنا پڑی‘ ہفتے کے دن چھ سال بعد ایک بار ....مزید پڑھئے‎

میں آج سے چھ سال پہلے بائی روڈ اسلام آباد سے ملتان گیا تھا‘ وہ سفر مشکل اور ناقابل برداشت تھا‘ رات لاہور رکنا پڑا‘ اگلی صبح نکلے تو ملتان پہنچنے میں سات گھنٹے لگ گئے‘ سڑک خراب تھی اور اس کی مرمت جاری تھی لہٰذا گرمی‘ پسینہ اور خواری بھگتنا پڑی‘ ہفتے کے دن چھ سال بعد ایک بار ....مزید پڑھئے‎