مودی سرکار کے مظالم سے سینکڑوں کشمیری بچے بصارت سے محروم، درجنوں سکول بھی تباہ و برباد کر دیے گئے، عالمی برادری پھر بھی خاموش

  پیر‬‮ 13 جولائی‬‮ 2020  |  0:10

لاہور (آن لائن)امیرجماعت اسلامی صوبہ وسطی پنجاب و صدر ملی یکجہتی کونسل پنجاب وسطی محمد جاوید قصوری نے کہاہے کہ مودی سرکارکے ظلم و بربریت سے سینکڑوں کشمیری بچے بصارت سے محروم ہوچکے ہیں جبکہ 47سکول مکمل تباہ و برباد کردیئے گئے ہیں۔ مظالم کی انتہا ہوگئی ہے مگر عالمی برادری کی مجرمانہ خاموشی ختم نہیں ہو رہی ۔ حکومت پاکستان کے کمزور اوربزدلانہ موقف نے کشمیر ایشو کوبہت نقصان پہنچایا ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روزمختلف تقریبات سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ بھارتی حکومت کشمیر میں اکثریت کو اقلیت میں بدلنے کے


لیے سر دھڑ کی بازی لگارہی ہے۔ 32سو سے زائد کشمیریوں کو ڈومیسائل جاری کیے جاچکے ہیں۔ جس کی وجہ سے ہندو بھی مقبوضہ کشمیر میں زمین خریدنے ، کاروبار چلانے اور ملازمتوں کے لیے اہل تصور ہوںگے۔ کشمیر پاکستان کی شہ ر گ ہے۔ اس سے دستبرداری کا ملطب پاکستان کی سا لمیت کو تھالی میں رکھ کر بھارت کے حوالے کرنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان میں بھارتی حکومتی مسلسل اقلیتوں اور بالخصوص مسلم آبادی پر مظالم کے پہاڑ توڑ رہی ہے۔ ہزاروں مسلمانوں کو بے گناہ قتل اور اربوں روپے کی املاک کو نقصان پہنچادیا گیا ہے۔ مگر بد قسمتی سے اقوام متحدہ نے اس حوالے سے شرمناک کردار ادا کیا ہے۔ عالمی دنیا کا بغض کھل کر سامنے آچکا ہے۔ محمد جاوید قصوری نے اس حوالے سے مزید کہا کہ اب وقت آگیا ہے کہ ہندوستان کو اس کی زبان میں ہی جواب دیا جائے۔ بھارت مختلف اوچھے ہتھکنڈے استعمال کرتے ہوئے پاکستان کے وجود کو نقصان پہنچانا چاہتا ہے۔ مودی نے آگ اور خون کا کھیل بھڑکا کر جنوبی ایشیا کا امن تہہ و بالا کردیا ہے۔ خطے میںچودھراہٹ قائم کرنے کی خواہش نے مودی حکومت کو پاگل بنادیا ہے۔ اس کا یہ منصوبہ پایہ تکمیل تک نہیں پہنچ سکتا۔


موضوعات: