فرشتہ قتل  کیس،  وزیراعظم  کے سخت نوٹس  کے بعد وفاقی پولیس    کی  منہ دکھائی پریس کانفرنس   کی تیاریاں 

  جمعہ‬‮ 21 جون‬‮ 2019  |  23:16

اسلام آباد(آن لائن) وزیراعظم عمران خان کی طرف سے فرشتہ قتل  کیس کے ملزمان کی گرفتاری  کے لئے  لئے  گئے سخت نوٹس  کے بعد وفاقی پولیس   نے دباؤ  سے بچنے کے لئے منہ دکھائی پریس کانفرنس  کرنے کے انتظامات   مکمل کر  لئے ہیں۔ وفاقی  پولیس  نے فرشتہ  قتل کیس  کا سراغ  لگانے کے لئے 8 لاکھ موبائل کالز کی جیو  فنسنگ کی  لیکن اصل ملزم   تک پہنچنے  میں ناکام  رہی بعد ازاں  741 کالز کا ڈیٹا  نکالا  گیا لیکن ملزم  کی نشاندہی  نہ ہو سکی اس پر وزیراعظم  عمران خان اور  وزیر داخلہ  نے سخت  برہمی  کا اظہار


کیا  پولیس ذرائع  نے بتایا کہ  وزیراعظم اور  وزیر داخلہ  کا دباؤ  کم کرنے کے لئے تھانہ شہزاد ٹاؤن  پولیس آج ، اتوار  کو اپنے افسران   کے ہمراہ  ایک منہ دیکھائی پریس کانفرنس  کرے گی  جس میں     ملزمان  پیش کئے جانے کا امکان  ہے  تا ہم پولیس  نے اس حوالے سے خصوصی  بندوبست کیا ہے کہ کوئی بھی صحافی  ان ملزمان  سے سوال نہ کرے اور انہیں کالے  نقاب چہرے  پر ڈال  کر میڈیا  کے روبرو  لایا جائے۔  اور ساتھ ہی  مبینہ ملزمان  کو بھی صحافیوں  کے رو برو   زبان بند  رکھنے کی سخت  ہدایت کی  گئی ہے فرشتہ قتل   کیس میں انتہائی  موثر  کردار ادا کرنے والے ایک  پولیس انسپکٹر  نے مبینہ طور پر بتایا  ہے کہ فی الحال حتمی  ملزمان کی نشاندہی نہیں ہو سکی ہے۔ اور ملزم کی نشاندہی  کے لئے جن سراغ رساں  کتوں کا استعمال  کیا گیا تھا وہ کتے بھی فیل ہو گئے ہیں  پولیس  ذرائع  کا کہنا ہے کہ آئندہ  چوبیس گھنٹوں  میں پریس کانفرنس  کے ذریعے وزیرداخلہ  اور وزیراعظم  ہاؤس کا دباؤ کم کر دیا جائے گا۔


موضوعات: