متنازع بلز پر نظرثانی کیلئے بنائی گئی خصوصی کمیٹی غیر فعال ہوگئی

  منگل‬‮ 3 اگست‬‮ 2021  |  16:00

اسلام آباد ( آن لائن)متنازع بلز پر نظرثانی کے لئے سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر کی جانب سے تشکیل دی جانے والی خصوصی کمیٹی غیر فعال ہوگئی اور 25 دن سے زائد گزرنے کے باوجود کمیٹی کے پہلے اجلاس کے فیصلوں پر بھی عملدرآمد نہ ہو سکا ۔پارلیمانی ذرائع کےمطابق ڈپٹی سپیکر قاسم سوری کی زیر صدارت ہونے والے ایک اجلاس میں 21 متنازع بلز کو پاس کیا گیا جس کی اپوزیشن نے شدید مخالفت کی تھی اور موقف اختیار کیا تھا کہ ان بلز کو کورم پورا نہ ہونے کے باوجود منظور کیا گیا جو خلاف قانون ہے اور


اپوزیشن نے اس پر پارلیمانی بزنس میں حکومت سے تعاون سے انکار کر دیا تھا جس پر سپیکر نے ایک خصوصی کمیٹی بنائی تھی جس میں14اراکین تھے اس کا ایک اجلاس بھی ہو چکا ہے جس میں فیصلہ ہوا تھا کہ مرحلہ وار پاس ہونے والے تمام متنازع بلز کا جائزہ لیا جائیگا لیکن جائزے کے لئے کمیٹی کا دوسرا اجلاس ابھی تک منعقد نہیں ہو سکا اور اس معاملے پر حکومت کے ساتھ ساتھ اپوزیشن بھی خاموش ہوگئی ہے ،واضح رہے کہ متنازع قانون سازی پر اپوزیشن نے ڈپٹی سپیکر کے خلاف عدم اعتماد کی تحریک جمع کرائی تھی جس پر حکومت کو کمیٹی بنانا پڑی مگر یہ کمیٹی غیر فعال ہوگئی ہے ۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

الیکشن کمیشن میں کیا ہو رہا ہے؟

میں اگر چیف الیکشن کمشنر سکندر سلطان راجہ کی ایک فقرے میں تشریح کروں تو یہ کہہ دینا کافی ہو گا ’’حکومت غلط آدمی سے ٹکرا گئی ہے‘ اس لڑائی میں صرف ایک فریق کو نقصان ہو گا اور وہ ہو گی حکومت ‘‘۔سکندر سلطان راجہ بھیرہ کے قریب چھوٹے سے گائوں چھانٹ میں پیدا ہوئے‘ گائوں میں بجلی تھی‘ ....مزید پڑھئے‎

میں اگر چیف الیکشن کمشنر سکندر سلطان راجہ کی ایک فقرے میں تشریح کروں تو یہ کہہ دینا کافی ہو گا ’’حکومت غلط آدمی سے ٹکرا گئی ہے‘ اس لڑائی میں صرف ایک فریق کو نقصان ہو گا اور وہ ہو گی حکومت ‘‘۔سکندر سلطان راجہ بھیرہ کے قریب چھوٹے سے گائوں چھانٹ میں پیدا ہوئے‘ گائوں میں بجلی تھی‘ ....مزید پڑھئے‎