اب ہوگا دما دم مست قلندر نوازشریف نے شہباز شریف کی ”اہم ”تجویز مان لی

  پیر‬‮ 14 جون‬‮ 2021  |  16:35

اسلام آباد،لاہور (آن لائن، این این آئی) مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف نے مسلم لیگ (ن ) قائد نوازشریف سے ٹیلی فونک رابطہ کیا ہے ۔ دونوں رہنمائوں نے قومی اسمبلی کے جاری بجٹ اجلاس اور اپوزیشن کی حکمت عملی پر تبادلہ خیال کیا ۔ اپوزیشن لیڈر نے بلاول بھٹو زرداری سے ہونیوالی ملاقاتوں پر نواز شریف کو اعتماد میں لیا ۔ قائد حزب اختلا فشہباز شریف نے کہا کہ پیپلز پارٹی اور اے این پی بجٹ منظوری رکوانے کیلئے ہمارے ساتھ چلنا چاہتی ہیں، پارلیمنٹ کے اندر اپوزیشن جماعتوں کے اتحاد سے حکومتی عزائم ناکام بنائے جا


سکتیں ۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ نوازشریف نے پارلیمنٹ میں تمام اپوزیشن جماعتوں کو ساتھ لیکر چلنے کی شہباز شریف کی تجویز مان لی ہے اور کہا ہے کہ بجٹ اجلاس میں حکومت کو ٹف ٹائم دیا جائے یہ عوام دشمن بجٹ ہے ۔ انہوں نے بجٹ اجلاس کے دوران ن لیگ کے تمام اراکین اسمبلی کو ایوان میں حاضری یقینی بنانے کی ہدایت کی ۔دونوں رہنمائوں نے اس بات پر اتفاق کیا کہ پی ڈی ایم کی سیاست اور فیصلوں کو پارلیمنٹ کے اندر تعاون پر اثر انداز نہیں ہونے دیا جائے گا۔دوسری جانب احتساب عدالت نے شہباز شریف فیملی کے خلاف منی لانڈرنگ اور آمدن سے زائد اثاثہ جات ریفرنس کی سماعت8جولائی تک ملتوی کردی ۔ احتساب عدالت کے جج شیخ سجاد احمد نے سماعت کی ۔دوران سماعت پنجاب اسمبلی میں قائد حزب اختلاف حمزہ شہبازاوردیگر نے اپنی حاضری مکمل کرائی جبکہ مسلم لیگ (ن) کے صدر شہباز شریف کی حاضری معافی کی درخواست جمع کراتے ہوئے موقف اپنایا گیا کہ شہبازشریف قومی اسمبلی کے بجٹ سیشن میں مصروف ہیں اس لئے حاضری معافی کی درخواست منظور کی جائے۔عدالت نے شہبازشریف کی حاضری معافی کی درخواست منظور کرتے ہوئے سماعت بغیر کسی کارروائی کے 8جولائی تک ملتوی کر دی۔ٹرائل کورٹ کے جج کی ٹرانسفر کے باعث سماعت بغیر کسی کاروائی کے ملتوی کی گئی اور کسی گواہ کا بیان قلمبند نہ کیا جا سکا ،عدالت نے آئندہ سماعت پر گواہان کو دوبارہ بیان قلمبند کرانے کے لیے طلب کر لیا۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

صرف پانچ ہزار روپے کے لیے

لاہور میں 23 جون 2021ء کی صبح 11 بج کر8 منٹ پر جوہر ٹائون میں ایک خوف ناک کار بم دھماکا ہوا تھا‘ دھماکے میں تین افراد جاں بحق اور 22 زخمی ہوئے جب کہ 12 گاڑیاں اور7 عمارتیں تباہ ہو گئی تھیں‘ بم کا اصل ہدف لشکر طیبہ کے لیڈر حافظ سعید تھے‘ یہ دھماکے سے چند گلیوں کے ....مزید پڑھئے‎

لاہور میں 23 جون 2021ء کی صبح 11 بج کر8 منٹ پر جوہر ٹائون میں ایک خوف ناک کار بم دھماکا ہوا تھا‘ دھماکے میں تین افراد جاں بحق اور 22 زخمی ہوئے جب کہ 12 گاڑیاں اور7 عمارتیں تباہ ہو گئی تھیں‘ بم کا اصل ہدف لشکر طیبہ کے لیڈر حافظ سعید تھے‘ یہ دھماکے سے چند گلیوں کے ....مزید پڑھئے‎