آٹے کے بحران کے آفٹر شاکس جاری،اعلیٰ ترین آفیسر تبدیل، وزیراعظم کو بھجوائی گئی رپورٹ میں انتہائی اہم انکشافات

  جمعہ‬‮ 24 جنوری‬‮ 2020  |  18:59

پشاور(آن لائن) آٹے کے منصوعی بحران کے باعث صوبے کے اعلیٰ ترین آفیسر کو تبدیل کردیاگیاہے جبکہ منصوعی آٹے کے بحران پر قابو نہ پانے پر بعض ڈپٹی کمشنرز کو بھی تبدیل کیا گیا ہے صوبائی حکومت کی جانب سے آٹے کے منصوعی بحران کا نوٹس لیتے ہو ئے فوری طور پر تحقیقات کے احکامات بھی جاری کئے ہیں وزیر اعظم عمران خان کو ارسال کردہ رپورٹ میں آٹے اور نابنائیوں کی ہڑتال کے بارے میں اہم انکشافات بھی کئے گئے ہیں جس میں کہا گیا ہے کہ صوبائی حکومت کو جان بوجھ کر بدنام کرنے کی کو شش کی


گئی ہےایک محکمہ کی غفلت اور بعض تاجروں کی جانب سے صوبائی حکومت کو بدنام کرنے کے لئے یہ سازش کی گئی تھی ذرائع نے بتایا ہے کہ صوبے میں آٹے کے منصوعی بحران کاصوبائی اور وفاقی حکومت نے سخت نوٹس لیا ہے اور ابتدائی طور پر ایک محکمہ کو اس کا ذمہ دار قرار دیتے ہو ئے محکمہ کے صوبے کے سربراہ کو بتدیل کردیاہے اور اس کی خدمات وفاق کے حوالے کردی ہے جبکہ ذرائع نے بتایا ہے کہ آٹے کے منصوعی بحران پر قابو نہ پانے پر بعض ڈپٹی کمشنرز کے تبادلے بھی کئے گئے ہیں۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

کوئی دوسرا آپشن نہیں بچا

خواجہ خورشید انور پاکستان کے سب سے بڑے موسیقار تھے‘ پاکستانی موسیقی میں ایک ایسا دور بھی آیا تھا جسے ’’خواجہ کا وقت‘‘ کہا جاتا تھا‘ وہ دھن نہیں بناتے تھے دل کی دھڑکن بناتے تھے اورجب یہ دھڑکنیں دھڑکتی تھیں تو ان کی آواز روح تک جاتی تھی‘ خواجہ صاحب نے 1958ء میں جھومر کے نام سے فلم شروع ....مزید پڑھئے‎

خواجہ خورشید انور پاکستان کے سب سے بڑے موسیقار تھے‘ پاکستانی موسیقی میں ایک ایسا دور بھی آیا تھا جسے ’’خواجہ کا وقت‘‘ کہا جاتا تھا‘ وہ دھن نہیں بناتے تھے دل کی دھڑکن بناتے تھے اورجب یہ دھڑکنیں دھڑکتی تھیں تو ان کی آواز روح تک جاتی تھی‘ خواجہ صاحب نے 1958ء میں جھومر کے نام سے فلم شروع ....مزید پڑھئے‎