بدھ‬‮ ، 24 جولائی‬‮ 2024 

واقعی 13 ماہ میں نیا پاکستان ممکن نہیں ہوتا۔۔لیکن۔۔اس کا ہرگز یہ مطلب نہیں آپ حالات کو اتنا خراب کر دیں کہ لوگوں کو (پرانا) پاکستان اچھا لگنے لگے،کس وفاقی وزیر کے خاندان کی کمپنی نے بھی اپنا پراجیکٹ روک لیا، پلانٹس بند ہورہے ہیں،لوگ صبر کیوں نہیں کرتے؟جاوید چودھری کاتجزیہ‎

datetime 7  اکتوبر‬‮  2019
ہمارا واٹس ایپ چینل جوائن کریں

آج وزیراعظم عمران خان نے ملک کے نامور فلاحی ادارے سیلانی ویلفیئر ٹرسٹ کے ساتھ مل کر اسلام آباد میں دستر خوان کا آغاز کیا‘ سیلانی ٹرسٹ ملک کا واحد ادارہ ہے جو پاکستان کے مختلف حصوں میں روزانہ 75 لاکھ روپے کا تیار کھانا تقسیم کرتا ہے‘ ملک میں اس وقت ان کے 160دستر خوان چل رہے ہیں اور ان کی تعداد میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے‘

اس ادارے کے روح رواں مولانا بشیر فاروقی ہیں‘یہ لوگ اس ملک کا اصل سرمایہ‘ اصل شناخت ہیں‘ یہ لوگ ہیں جن کو جتنے بھی سیلوٹ کیے جائیں وہ کم ہوں گے‘ آج وزیراعظم نے اس تقریب میں عوام سے ایک شکوہ بھی کیا کہ 13 ماہ ہوئے ہیں اور لوگ کہتے ہیں کہاں ہے نیا پاکستان؟ وزیراعظم کا شکوہ بجا ہے‘ واقعی 13 ماہ میں نیا پاکستان ممکن نہیں ہوتا لیکن اس کا ہرگز یہ مطلب نہیں آپ حالات کو اتنا خراب کر دیں کہ لوگوں کو پرانا پاکستان اچھا لگنے لگے‘ آج ہی خبر آئی ہے گاڑیاں بنانے والی پاکستانی جاپانی کمپنی گندھارا نسان لمیٹڈ نے نئی گاڑیوں کی اسمبلنگ کے منصوبے کو روک دیا‘ کمپنی نے 1200 سی سی کی گاڑیاں بنانے کے لیے اگلے سال سے ساڑھے چھ ارب روپے کی سرمایہ کاری کرنی تھی لیکن ملک کی ابتر معاشی حالت کی وجہ سے کمپنی نے یہ پراجیکٹ روک دیااور یہ انرجی اور پٹرولیم کے وفاقی وزیر عمر ایوب کے خاندان کی کمپنی ہے‘ اگر عمر ایوب کی خاندانی کمپنی کی یہ حالت ہو گئی ہے تو آپ باقی مارکیٹ کا اندازہ خود کر لیجیے‘ پاکستان میں آٹو موبائل کا پورا سیکٹر بیٹھ گیا ہے‘ گاڑیوں کی سیل 50 فیصد نیچے آ گئی ہے‘ کمپنیوں کے پورے پورے پلانٹس بند ہو رہے ہیں‘ ہونڈا کی سیل 33 فیصداور ٹویوٹا کی سیل 17فیصد نیچے آ گئی لیکن وزیراعظم کا فرمانا ہے لوگ صبر نہیں کرتے‘ لوگوں میں صبر کیوں نہیں ہے، اپوزیشن جماعتیں تھوڑی سی تاخیر کے بعد مولانا فضل الرحمن کے ساتھ جڑ رہی ہیں، کل راہبر کمیٹی کا اجلاس ہے‘ کیا کل پوری اپوزیشن مولانا کے ساتھ اکٹھی ہو جائے گی؟

موضوعات:



کالم



جارجیا میں تین دن


یہ جارجیا کا میرا دوسرا وزٹ تھا‘ میں پہلی بار…

کتابوں سے نفرت کی داستان(آخری حصہ)

میں ایف سی کالج میں چند ہفتے یہ مذاق برداشت کرتا…

کتابوں سے نفرت کی داستان

میں نے فوراً فون اٹھا لیا‘ یہ میرے پرانے مہربان…

طیب کے پاس کیا آپشن تھا؟

طیب کا تعلق لانگ راج گائوں سے تھا‘ اسے کنڈیارو…

ایک اندر دوسرا باہر

میں نے کل خبروں کے ڈھیر میں چار سطروں کی ایک چھوٹی…

اللہ معاف کرے

کل رات میرے ایک دوست نے مجھے ویڈیو بھجوائی‘پہلی…

وہ جس نے انگلیوں کوآنکھیں بنا لیا

وہ بچپن میں حادثے کا شکار ہوگیا‘جان بچ گئی مگر…

مبارک ہو

مغل بادشاہ ازبکستان کے علاقے فرغانہ سے ہندوستان…

میڈم بڑا مینڈک پکڑیں

برین ٹریسی دنیا کے پانچ بڑے موٹی ویشنل سپیکر…

کام یاب اور کم کام یاب

’’انسان ناکام ہونے پر شرمندہ نہیں ہوتے ٹرائی…

سیاست کی سنگ دلی ‘تاریخ کی بے رحمی

میجر طارق رحیم ذوالفقار علی بھٹو کے اے ڈی سی تھے‘…