کورونا وائرس سے ہلاکتیں، چین میں ایمرجنسی نافذ، بیجنگ کو مکمل طور پر لاک ڈاؤن کردیا گیا

  ہفتہ‬‮ 25 جنوری‬‮ 2020  |  23:50

بیجنگ (مانیٹرنگ ڈیسک) چین میں کورونا وائرس کی وجہ سے ہلاکتوں کا سلسلہ جاری ہے جس وجہ سے چین میں ایمرجنسی نافذ کر دی گئی ہے کرونا وائرس سے ہلاکتوں کی وجہ سے چین میں ایمرجنسی نافذ کر دی گئی۔ چینی دارالحکومت بیجنگ کو مکمل طور پر لاک ڈاؤن کردیا گیا، کوئی شخص کل سے نہ باہر جا سکے گا اور نہ ہی کوئی بیجنگ کے اندر جا سکے گا۔ لوگوں کو سیاحتی مقامات پر جانے سے بھی منع کر دیا گیا ہے۔عوام کو وائرس سے بچانے کے لئے چین نے پندرہ شہروں کو لاک ڈاؤن کر دیا ہے اور


ووہان شہر میں ہنگامی طور پر نئے ہسپتال کی تعمیر کے کام کا آغاز کر دیا ہے۔ چین کے نئے سال کے موقع پر ہانگ کانگ، بیجنگ اور دیگر بڑے شہروں میں تقریبات منسوخ کر دی گئی ہیں۔ لاک ڈاؤن کی وجہ سے کروڑوں افراد کو پریشانی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔واضح رہے کہ چین سے پھیلنے والے ہلاکت خیز کورونا وائرس کے دیگر مملک تک پہنچنے کے بعد بیجنگ میں موجود پاکستانی سفارتخانے نے چین میں مقیم پاکستانیوں کے لیے انتباہ جاری کردیا۔ کورونا وائرس کے باعث چین میں 40 سے زائد افراد ہلاک اور ایک ہزار سے زائد افراد اس وائرس میں مبتلا ہوچکے ہیں جس میں تقریباً 250 کی حالت تشویشناک ہے۔مذکورہ وائرس چین کے صوبے ہوبے کے شہر ووہان سے شروع ہوا اور 39 افراد کی ہلاکت کا سبب بنا جبکہ متاثرہ افراد کی بھی سب سے زیادہ تعداد ووہان سے ہی تعلق رکھتی ہے۔چین کے دارالحکومت میں موجود پاکستانی سفارتخانے نے ووہان میں مقیم پاکستانی طلبا اور دیگر پاکستانی افراد کو چین کے محکمہ صحت کی جاری کردہ ہدایات پر عمل کرنے کی ہدایت کی ہے۔سفارتخانے سے جاری بیان میں چین کی وزارت صحت کا حوالہ دیتے ہوئے بتایا گیا کہ یہ بات ثابت ہوگئی ہے کہ کورونا وائرس ایک انسان سے دوسرے انسان میں منتقل ہوجاتا ہے۔بیان میں بتایا گیا کہ ووہان کی شہری حکومت نے عوام کو عارضی طور پر طویل فاصلے کے سفر سے روک دیا ہے اور ووہان سے ریلوے اور ہوائی جہازوں کے سفری شیڈول بھی منسوخ کر دیے گئے ہیں۔سفارتخانے نے بیان میں کہا کہ ووہان شہر کی حکومت نے مذکورہ اقدامات کورونا وائرس کی روک تھام کے لیے اٹھائے ہیں۔بیان میں پاکستانی کمیونٹی خصوصاً طلبا کو مخاطب کرتے ہوئے محتاط رہنے کی ہدایت کی گئی اور کہا گیا کہ حفظان صحت کا خیال اور صحت ایڈوائزری پر عمل کریں۔سفارتخانے کے ترجمان نے بتایا کہ پاکستانی سفارتخانہ، ووہان میں طلبا سمیت دیگر ہم وطنوں کے ساتھ رابطے میں ہے۔انہوں نے ہدایت کی کہ اگر کوئی پاکستانی شہری کورونا وائرس سے متاثر ہو تو چینی حکام سے تعاون کرے اور متاثرہ پاکستانی فوری طور پر بیجنگ میں مشن کو اطلاع دیں۔اس کے ساتھ جن طلبا کے ویزا کی معیاد اختتام پذیر ہونے والی ہیں انہیں جامع دستاویزات کے ساتھ سفارتخانہ کو مطلع کرنے کا کہا گیا کہ طلبا سمیت پاکستانی کمیونٹی سفارتی مشن سے بلا روک ٹوک معاونت کے لیے رابطہ کرے۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

قاسم پاشا کی گلیوں میں

آیا صوفیہ کے سامنے دھوپ پڑی تھی‘ آنکھیں چندھیا رہی تھیں‘ میں نے دھوپ سے بچنے کے لیے سر پر ٹوپی رکھ لی‘ آنکھیں ٹوپی کے چھجے کے نیچے آ گئیں اور اس کے ساتھ ہی ماحول بدل گیا‘ آسمان پر باسفورس کے سفید بگلے تیر رہے تھے‘ دائیں بائیں سیکڑوں سیاح تھے اور ان سیاحوں کے درمیان ....مزید پڑھئے‎

آیا صوفیہ کے سامنے دھوپ پڑی تھی‘ آنکھیں چندھیا رہی تھیں‘ میں نے دھوپ سے بچنے کے لیے سر پر ٹوپی رکھ لی‘ آنکھیں ٹوپی کے چھجے کے نیچے آ گئیں اور اس کے ساتھ ہی ماحول بدل گیا‘ آسمان پر باسفورس کے سفید بگلے تیر رہے تھے‘ دائیں بائیں سیکڑوں سیاح تھے اور ان سیاحوں کے درمیان ....مزید پڑھئے‎