ترکی شام میں کرد جنگجوؤں کیخلاف فوجی کارروائی روک دے : یورپی یونین کا مطالبہ

  جمعرات‬‮ 10 اکتوبر‬‮ 2019  |  10:05

برسلز(این این آئی)یورپی کمیشن کے صدر  ژاں کلاڈ جنکر نے ترکی سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ شام میں کرد جنگجوؤں کے خلاف اپنی فوجی کارروائی روک دے۔انھوں نے ترکی پر واضح کیا ہے کہ اگر اس نے یہ کارروائی جاری رکھی تو یورپی یونین شام میں مجوزہ ’’سیف زون‘‘ کے قیام کے لیے کوئی رقم نہیں دے گی۔کلاڈ جنکر نے یورپی پارلیمان میں بیان دیتے ہوئے کہاکہ میں ترکی اور دوسرے کرداروں پر زور دوں گا کہ وہ ضبط وتحمل سے کام لیں اور جاری آپریشنز کو روک دیں۔ان کے اس مطالبے سے چندے قبل ہی ترک صدر رجب طیب


ایردوآن نے بدھ کو شام کے شمال مشرقی علاقے میں کرد جنگجوؤں کے خلاف فوجی کارروائی شروع کرنے کا اعلان کیا تھا۔انھوں نے شام کے شمال میں اس کارروائی کو ’آپریشن امن بہار‘ کا نام دیا ہے۔انھوں نے ٹویٹر پر لکھا کہ اس فوجی کارروائی میں شمالی شام میں کرد جنگجوؤں اور داعش کو نشانہ بنایا جارہا ہے۔ہمارے مشن کا مقصد ہماری جنوبی سرحد پر دہشت گردی کی راہداری کو قائم ہونے سے روکنا اورعلاقے میں امن کا قیام ہے۔

موضوعات:

loading...