ہسپتال میں رکھنا ہے یا واپس اڈیالہ جیل بھیجنا ہے؟لیگی رہنما اور سابق وزیراعظم نوازشریف کے دامادکیپٹن (ر) صفدر کے بارے میں بڑافیصلہ کرلیاگیا

  جمعہ‬‮ 10 اگست‬‮ 2018  |  19:52

اسلام آباد(این این آئی) پمز ہسپتال کے ڈاکٹرز نے کہاہے کہ لیگی رہنما کیپٹن (ر) صفدر کی طبیعت انتہائی ناساز ہونے کے باعث انہیں اسپتال میں ہی رکھا جائے گا۔میڈیا رپورٹ کے مطابق پمز ہسپتال کے میڈیکل بورڈ نے سابق وزیراعظم نوازشریف کے داماد اور مسلم لیگ (ن) کے رہنما کیپٹن (ر) صفدر کا طبی معائنہ کیا اور گزشتہ روز کیے گئے تمام ٹیسٹ کی رپورٹس کا بھی جائزہ لیا۔ڈاکٹرز کے مطابق کیپٹن (ر) صفدر کے مزید ٹیسٹ لیبارٹریز کو بھجوا دیئے گئے ، ان کے اسٹنٹ کی صورتحال معلوم کرنے کے لئے دل کی ایکو اور ای سی جی

بھی کی ہے ٗ ان کے معدے کے بھی ٹیسٹ کئے جائیں گے، کیپٹن (ر) صفدر کو شوگر اور معدے کا مرض بھی لاحق ہے اس لئے انہوں نے گھر سے آیا ہوا کھانا بھی نہیں کھایا بلکہ حلق خشک ہونے کے باعث صرف پانی پی رہے ہیں۔ ڈاکٹرز کے مطابق جیل میں مسلسل تین روز تک بیمار رہنے سے کیپٹن صفدر کے الیکٹرولائیٹس میں خرابی پیدا ہوگئی ہے، کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کو کارڈیک سنٹر کے وی آئی پی وارڈ میں داخل کیا گیا اور ڈاکٹرز کی جانب انہیں پرہیزی کھانا کھانے کی ہدایت کی گئی ہے۔واضح رہے کہ گزشتہ روز کیپٹن (ر) صفدر کی اڈیالہ جیل میں طبیعت بگڑ گئی تھی۔جیل ذرائع کے مطابق معدے کی گنجائش کم کرانے کیلئے آپریشن کی وجہ سے کیپٹن صفدر کو تکلیف کا سامنا تھا اور وہ جو چیز کھاتے یا پیتے ہیں الٹی کر دیتے ہیں، جس کے باعث انہیں پمز ہسپتال منتقل کیا گیا۔ پمز ہسپتال کے ڈاکٹرز نے کہاہے کہ لیگی رہنما کیپٹن (ر) صفدر کی طبیعت انتہائی ناساز ہونے کے باعث انہیں اسپتال میں ہی رکھا جائے گا۔میڈیا رپورٹ کے مطابق پمز ہسپتال کے میڈیکل بورڈ نے سابق وزیراعظم نوازشریف کے داماد اور مسلم لیگ (ن) کے رہنما کیپٹن (ر) صفدر کا طبی معائنہ کیا اور گزشتہ روز کیے گئے تمام ٹیسٹ کی رپورٹس کا بھی جائزہ لیا۔ ڈاکٹرز کے مطابق کیپٹن (ر) صفدر کے مزید ٹیسٹ لیبارٹریز کو بھجوا دیئے گئے

موضوعات:

آج کی سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں