عمران خان اگر وزیراعظم بن گئے تو کیا کالا باغ ڈیم بنائیں گے؟تحریک انصاف کی جانب سے مؤقف سامنے آگیا

  جمعرات‬‮ 14 جون‬‮ 2018  |  17:49

پشاور(این این آئی)سپیکر خیبرپختونخوا اسمبلی اسدقیصر نے کہا ہے کہ کالاباغ ڈیم کے ایشو پر تمام صوبوں کی اتفاق رائے ضروری ہے ، آنے والا دور ایک بار پھر پی ٹی آئی کا ہے ،2018 کے الیکشن میں پی ٹی آئی صوابی سمیت پورے صوبے میں کلین سویپ کرے گی ،ان خیالات کا اظہار انہوں نے حجرہ سینئر صحافی محمد فاروق سلیم خان میں پی ٹی آئی یوتھ کے رہنما شہزادہ فہد کی جانب سے دئیے گئےافطار پارٹی کے موقع پر صوابی الیکٹرانک میڈیا ایسوسی ایشن کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کیا ، سپیکر اسدقیصر نے کہا کہ

اگر پاکستان تحریک انصاف کو دوبارہ موقع ملا تو صوبے میں معاشی استحکام ،بیروزگاری کا خاتمہ اور زراعت کی ترقی اولین ترجیحات میں شامل ہوگی ، انہوں نے کہا کہ کالاباغ ڈیم ایک ایسا ایشو ہے جس پر تمام صوبوں اور سیاسی پارٹیوں کی اتفاق رائے ضروری ہے ، انہوں نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف واحد پارٹی ہے جس کے پاس ملک کو ترقی سے ہمکنار کرنے کا حقیقی منشور ہے جبکہ دیگر تمام سیاسی پارٹیاں عوام کی آنکھوں میں دھول چھونک کر ان کو کھوکھلے نعروں سے ورغلارہی ہے ،عوا م باشعور ہو گئے ہیں، آئندہ انتخابات میں عمران خان کی شکل میں ایک ایماندار اور دیانتدارلیڈر کاانتخاب کرنے میں بڑھ چڑھ کرحصہ لیں گے،انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ نے اپنے پہلے دورمیں گدو ن کی مراعات چھین لی اور دوسرے دورمیں صوابی کا پانی چوری کرکے غازی بروتھاڈیم کا پائور ہاؤس پنجاب میں قائم کیا اور لوگوں کو بے روزگارکیا ،2018 کے الیکشن میں جب پی ٹی آئی اقتدار میں آئے گی تو سب سے پہلے صوابی کا جو پانی چوری کیا گیا ہے اس کو واپس صوابی منتقل کرے گی ،صوابی میں اس وقت پیہور ہائی لیول کینال ،کنڈل ڈیم اور بادہ ڈیم بن رہا ہے جو صوابی کی تقدیر بدل دے گی ،پیہور ہائی لیول کینال سے صوابی کی زمینیں سیراب ہوجائے گی ،انہوں نے کہا کہ سی پیک کے تحت کرنل شیر انٹر چینج کر قریب صنعتی زون کے قیام سے لاکھوں افراد کو روزگار کے موقع میسر ہونگے ، جس سے صوابی ،نوشہرہ اور مردان کے عوام مستفید ہونگے ۔

موضوعات:

آج کی سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں