بھارت میں مسلمان حکومت تبدیل نہیں کرسکتے اسد الدین اویسی کا بیان توجہ کا مرکز بن گیا

  اتوار‬‮ 15 مئی‬‮‬‮ 2022  |  23:43

حیدرآباد دکن (این این آئی )آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین کے سربراہ اسد الدین اویسی نے کہا ہے کہ بھارت میں مسلمانوں کا ووٹ بینک نہ کبھی تھا اور نہ کبھی ہوگا، مسلمان بھارت میں حکومت تبدیل نہیں کرسکتے۔ میڈیارپورٹس کے مطابق

حیدرآباد سے بھارتی رکن پارلیمنٹ نے اپنے ایک خطاب کے دوران کہا کہ مسلمان بھارت میں حکومت کی تبدیلی نہیں لاسکتے۔ انہوں نے کہا کہ آپ کو گمراہ کیا جارہا ہے کہ آپ کا ووٹ بینک ہے، یہاں صرف اکثریت کا ووٹ بینک تھا، ہے اور رہے گا، نہ آپ کا کوئی ووٹ بینک ہے اور نہ کبھی ہوگا۔ ان کا کہنا تھا کہ آپ کو دلنشین اور دلفریب باتوں میں الجھا کر بتایا جارہا ہے کہ آپ کا ووٹ بینک ہے جبکہ ایسا نہیں ہے۔ اسد الدین اویسی نے اپنی بات کی وضاحت یوں پیش کی کہ اگر بھارت میں مسلمانوں کا ووٹ بینک ہوتا اور یہ یہاں کی حکومت بدل سکتے تو پارلیمان میں مسلمانوں کی نمائندگی اتنی کم کیوں ہے؟انہوں نے کہا کہ میں سیاست کا طالبِ علم ہوں، میں نے جو کچھ سیکھا اور سیکھ رہا ہوں وہ مجھے کہہ رہا ہے کہ ہم حکومت کبھی نہیں بدل سکتے۔



زیرو پوائنٹ

گھوڑا اور قبر

میرا سوال سن کر وہ ٹکٹکی باندھ کر میری طرف دیکھنے لگے‘ میں نے مسکرا کر سوال دہرا دیا‘ وہ غصے سے بولے ’’بھاڑ میں جائے دنیا‘ مجھے کیا لوگ آٹھ ارب ہوں یا دس ارب‘‘ میں نے ہنس کر جواب دیا’’ آپ کی بات سو فیصد درست ہے‘ ہمیں اس سے واقعی کوئی فرق نہیں پڑتا‘ ہمارے لیے صرف اپنی ....مزید پڑھئے‎

میرا سوال سن کر وہ ٹکٹکی باندھ کر میری طرف دیکھنے لگے‘ میں نے مسکرا کر سوال دہرا دیا‘ وہ غصے سے بولے ’’بھاڑ میں جائے دنیا‘ مجھے کیا لوگ آٹھ ارب ہوں یا دس ارب‘‘ میں نے ہنس کر جواب دیا’’ آپ کی بات سو فیصد درست ہے‘ ہمیں اس سے واقعی کوئی فرق نہیں پڑتا‘ ہمارے لیے صرف اپنی ....مزید پڑھئے‎