عیسائیت مذہب سے تعلق رکھنے والے کیتھولک پوپ نے اسلام قبول کر لیا

  جمعہ‬‮ 24 ستمبر‬‮ 2021  |  14:11

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک )عیسائی مذہب کے کتھولک پوپ نے اسلام قبول کر لیا ۔ تفصیلات کےمطابق مسلمان ہونے والے سابق پوپ نے 10 سال تک چرچ میں پوپ کے فرائض انجام دے رہے تھے ۔غیر ملکی میڈیا رپورٹس کے مطابق نو مسلم ڈاکٹر فینٹر کہنا تھا کہوہ 1955امریکی ریاست کیرولائنا میں پیدا ہوئے اور تعلیم حاصل کرنے کے بعد وہ کتھولک پوپ بن گئے انہوں نے مختلف یونیورسیٹیز میں تعلیم خدمات سر انجام دیں ہیں ۔ ڈاکٹر فینٹر کا کہنا تھا کہ اتنا پڑھنے کے باوجود بھی محسوس کرتے تھے کہ ایک خلا ہے جو پُر نہیں ہو رہا تھا لیکن پھر


وقت بدلا اور میرے ہاتھ میں وہ مولانا جلال الدین رومیؒ کا کلام آیا جس پڑھنے کے بعد میرے زندگی میں موجوداور اس سے پہلے میں جو کچھ کر چکا تھا سب فضول لگنے لگا تھا ، مولانا رومی ؒ کے کلام نے میرے زندگی بدل کر رکھ دی اور میں نے اسلام قبول کر لیا ۔انکا کہنا تھا کہ 2004 میں انہوں نے اسی مقصد کے تحت امریکا میں موجود مولانا جلال الدین رومیؒ کی 22 ویں نسل سے پوتے ایرسین چیلیبی بائے رو کیساتھ ملاقات کی یہ ملاقات ان کے لئے اسلام کے بارے میں معلومات حاصل کرنے کا سبب بنی۔ 2005 میں فینٹر بائےرو کی دعوت پر قونیہ آئے اور شب عروس کی تقریبات میں شرکت کی۔انکا کہنا تھا کہ میں میری ملاقات ایک نوجوان درویش کیساتھ ہوئی جس نے میرے فیملی سے متعلق پوچھا ، میں نے کہا کہ میرا کوئی نہیں والدین فوت ہو گئے ہیں پھر اس نوجوان نے کہا ہے کہ فکر نہ کرو آج سے ہم تمہارا خاندان ہیں ۔


زیرو پوائنٹ

نئی سیاسی کھچڑی

’’کرکٹ اگر مذہب ہوتا تو پورا برصغیر اس مذہب کا پیروکار ہوتا‘‘ یہ فقرہ کسی نے کہا تھا اور سچ کہا تھا‘ یہ واقعی حقیقت ہے سارک ممالک کرکٹ کے جنون میں مبتلا ہیں اور یہ خواہ کتنے ہی منقسم کیوں نہ ہوں یہ لوگ کرکٹ پر ایک ہو جاتے ہیں‘ پاکستان بھی اس جنون کی اعلیٰ ترین مثال ہے‘ ....مزید پڑھئے‎

’’کرکٹ اگر مذہب ہوتا تو پورا برصغیر اس مذہب کا پیروکار ہوتا‘‘ یہ فقرہ کسی نے کہا تھا اور سچ کہا تھا‘ یہ واقعی حقیقت ہے سارک ممالک کرکٹ کے جنون میں مبتلا ہیں اور یہ خواہ کتنے ہی منقسم کیوں نہ ہوں یہ لوگ کرکٹ پر ایک ہو جاتے ہیں‘ پاکستان بھی اس جنون کی اعلیٰ ترین مثال ہے‘ ....مزید پڑھئے‎