نوازشریف اپنے علاج کے ساتھ نا اہل ٹولے کا بھی علاج کریں ،رانا ثناء اللہ نے دبے لفظوں میں حکومت کو دھمکی بھی دے ڈالی‎

  ہفتہ‬‮ 5 دسمبر‬‮ 2020  |  0:34

فیصل آباد (این این آئی) پاکستان مسلم لیگ (ن) پنجاب کے صدر رانا ثناء  اللہ نے کہا ہے کہ نوازشریف اپنے علاج کے ساتھ نا اہل ٹولے کا بھی علاج کریں ، آٹھ دسمبر کو پی ڈی ایم کی سربراہی کا اجلاس ہوگا ،لاہور جلسے سے گرفتاریاں ہوئیں تو سنجیدہ نتائج ہونگے حکمرانوں کو ہوش کے ناخن لینے چاہئیں ۔جمعہ کو یہاں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مسلم لیگ ن کے سینئر رہنما رانا ثناء اللہ نے کہا کہورکر کنونشن کرنے کے لیے ہمیں کسی انتظامیہ سے اجازت لینے کی ضرورت نہیں،ورکر کنونشن کیلئے انتظامیہ نے کوئی سیکورٹی بھی فراہم


نہیں کی اور ہم نے اپنی سیکورٹی کے خود انتظامات کیے ہیں،دیکھتے ہیں انتظامیہ ہمارے ورکر کو یہاں آنے سے روکتی ہے یا نہیں۔ سابق وزیر  نے کہاکہ ڈپٹی کمشنر نے 30 نومبر کو لوگوں کو بے جا گرفتار کیا، ڈپٹی کمشنر سے مطالبہ ہے کہ ان لوگوں کو فی الفور رہا کیا جائے،حکومتیں آنی جانی چیز ہیں،کسی کی وفاداری میں اس حدتک نہیں جانا چاہیے کہ لوگوں پر ظلم کریں اور مقدمات درج کرائیں،یہ اندازے سے مقدمے درج کر رہے ہیں،ملتان میں انتظامیہ کے کریک ڈاؤن کے بعد پورے ملتان میں جلسہ ہوا،لوگ جب نکلے تو پھر پورے شہر میں ٹریفک وارڈن تک نظر نہیں آیا،اگر یہی    ‎    حالات لاہور میں کرنے ہیں تو پھر ان کی مرضی ہے،پھر کوئی تصادم ہوا تو اس کے ذمہ دار ہم نہیں حکومت ہو گی،اگر لاہور جلسے سے گرفتاریاں ہوئیں تو اس کے سنجیدہ نتائج ہونگے ان کو ہوش کے ناخن لینے چاہئیں۔رانا ثنااللہ نے کہا کہ 8 دسمبر کو پی ڈی ایم کا سربراہی اجلاس ہو گا، اس اجلاس سے متعلق مریم نواز کی شہباز شریف سے ملاقات ہوئی،پی ڈی ایم کا سربراہی اجلاس فیصلہ کرے گا کہ 13 دسمبر کے بعد کیا حکمت عملی ہو گی۔سابق وزیر نے کہاکہ نوازشریف علاج کی غرض سے لندن میں مقیم ہیں، نوازشریف علاج مکمل ہونے پر پاکستان آئیں گے۔ انہوںنے نوازشریف کومشورہ دیا کہ اپنا اوراس نااہل ٹولے کابھی علاج کریں۔ ایک سوال پر انہوںنے کہاکہ انتظامیہ بے جا کارکنوں کی پکڑ دھکڑ کر رہی ہے، ایسے اقدامات نہ کریں جس سے حالات خرابی کی طرف جائیں، حکومت سیاسی مقدمات درج کرنے کا ورلڈ ریکارڈ قائم کر رہی ہے۔سابق وزیر اعظم نے حکومتی رہنمائوں پر تنقید کرتے ہوئے کہاکہ نوازشریف کی والدہ کے انتقال کے بعد وزراء نے گھٹیازبان استعمال کی ۔‎


زیرو پوائنٹ

ایک غلط گیند

آپ اگر موجودہ سیاسی حالات کو سمجھنا چاہتے ہیں تو پھر آپ کو دو شخصیات اور مضبوط ترین ادارے کا تجزیہ کرنا ہو گا‘ پہلی شخصیت عمران خان ہیں‘ عمران خان کے تین پہلو ہیں‘ یہ فاسٹ بائولر ہیں‘ عمران خان نے 20سال صرف بائولنگ کرائی اور بائولنگ بھی تیز ترین چناں چہ یہ فاسٹ بائولنگ ان کی شخصیت کا ....مزید پڑھئے‎

آپ اگر موجودہ سیاسی حالات کو سمجھنا چاہتے ہیں تو پھر آپ کو دو شخصیات اور مضبوط ترین ادارے کا تجزیہ کرنا ہو گا‘ پہلی شخصیت عمران خان ہیں‘ عمران خان کے تین پہلو ہیں‘ یہ فاسٹ بائولر ہیں‘ عمران خان نے 20سال صرف بائولنگ کرائی اور بائولنگ بھی تیز ترین چناں چہ یہ فاسٹ بائولنگ ان کی شخصیت کا ....مزید پڑھئے‎