پنشن اور تنخواہیں کم کرو، پنشنرز اور سرکاری ملازمین بارے حکومت پر آئی ایم ایف کے دباؤ کا انکشاف

  جمعرات‬‮ 26 ‬‮نومبر‬‮ 2020  |  22:22

اسلام آباد (این این آئی) وفاقی حکومت کی قائم خصوصی کمیٹی نے سرکاری ملازمین کی تنخواہ اور پینشن میں اصلاحات کیلئے کام کا آغاز کر دیا، وفاقی حکومت ملازمین کو تنخواہ میں 431 ارب روپے جبکہ پنشن میں 421 ارب روپے سالانہ ادا کر رہی ہے۔ مشیر خزانہ ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ نے پے اینڈ پنشن کمیشن 2020ء کا افتتاحی اجلاس سے خطاب کیا،پے اینڈ پنشن کمیشن سابقوفاقی سیکرٹیری نرگس سیٹھی کی سربراہی میں سرکاری اور نجی شعبے کے سینئر پیشہ ور افراد پر مشتمل ہے۔ذرائع کے مطابق وفاقی حکومت ملازمین کو تنخواہ میں 431 ارب روپے جبکہ پنشن میں 421


ارب روپے سالانہ ادا کر رہی ہے آئی ایم ایف کا دباؤ ہے کہ سرکاری ملازمین کی پنشن کا بوجھ کم کیا جائے جبکہ ملازمین کی تنخواہ کم کرنے کیلئے عملہ کم کیا جائے۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

ایک غلط گیند

آپ اگر موجودہ سیاسی حالات کو سمجھنا چاہتے ہیں تو پھر آپ کو دو شخصیات اور مضبوط ترین ادارے کا تجزیہ کرنا ہو گا‘ پہلی شخصیت عمران خان ہیں‘ عمران خان کے تین پہلو ہیں‘ یہ فاسٹ بائولر ہیں‘ عمران خان نے 20سال صرف بائولنگ کرائی اور بائولنگ بھی تیز ترین چناں چہ یہ فاسٹ بائولنگ ان کی شخصیت کا ....مزید پڑھئے‎

آپ اگر موجودہ سیاسی حالات کو سمجھنا چاہتے ہیں تو پھر آپ کو دو شخصیات اور مضبوط ترین ادارے کا تجزیہ کرنا ہو گا‘ پہلی شخصیت عمران خان ہیں‘ عمران خان کے تین پہلو ہیں‘ یہ فاسٹ بائولر ہیں‘ عمران خان نے 20سال صرف بائولنگ کرائی اور بائولنگ بھی تیز ترین چناں چہ یہ فاسٹ بائولنگ ان کی شخصیت کا ....مزید پڑھئے‎