عالمی برادری مودی پر انسانیت کیخلاف جرائم کا مقدمہ چلائے: شہباز شریف کا مطالبہ

  بدھ‬‮ 5 اگست‬‮ 2020  |  17:33

لاہور (آن لائن) پاکستان مسلم لیگ(ن)کے صدر و قائد حزب اختلاف محمد شہباز شریف نے کا اقوام متحدہ سے کشمیریوں کو حق خودارادیت دینے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ اقوام متحدہ سلامتی کونسل کی جموں و کشمیر پر قراردادوں پر عملدرآمد کرائے ۔5اگست کے بھارتی اقدام کے خلاف اپنے بیان میں شہباز شریف نے کہا کہ اقوام متحدہ مقبوضہ جموں و کشمیر سے بھارتی فوج کا انخلا ءکراکے اپنی نگرانی میں آزادانہ اور غیر جانبدارانہ استصواب رائے منعقد کرائے ۔،تنازعہ جموں و کشمیر کے حل تک اقوام متحدہ کی ساکھ پر سوال رہیں گے ،کشمیریوں کو ان کا


جمہوری، قانونی اور اخلاقی حق نہ دینا دنیا میں جنگوں کی حوصلہ افزائی اور اقوام متحدہ کے چارٹر کی خلاف ورزی ہے ۔ انہوںنے کہا کہ او آئی سی کا اعلی سطحی اجلاس بلایا جائے،5 اگست عالمی ضمیر اور اقوام متحدہ کی ساکھ کے مجروح ہونے کا دن ہے ،کشمیر کی آزادی نوشتہ دیوار ہے ،مودی کا ظلم کشمیریوں کی آزادی کا سورج طلوع ہونے سے نہیں روک سکتا۔ انہوں نے کہا کہ بے گناہ اور نہتے کشمیریوں کا قتل عام جاری ہے اور دنیا خاموش تماشائی بنی ہوئی ہے ، کشمیری نوجوانوں اور کم سن بچوں کو بھارتی عقوبت خانوں میں مظالم کا نشانہ بنایا جا رہا ہے ،کشمیریوں کی اپنی آزادی اور حقوق کیلئے آواز دبانے کے لئے جبرو استبداد کے بہیمانہ ہتھکنڈے اختیار کئے جارہے ہیں۔ شہباز شریف کا کہنا تھا کہ کشمیری دو قومی نظریے، پاکستان کی شہ رگ اور تحریک تکمیل پاکستان کی جنگ لڑ رہے ہیں۔ عالمی برادری قاتل مودی پر انسانیت کے خلاف جرائم کا مقدمہ چلائے۔ کشمیری خواتین اور بچوں پر مظالم پر عالمی اور انسانی حقوق کے ادارے بھارتی حکومت کے خلاف پابندیوں کے نفاذ کا اقدام اٹھائیں۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

سرعام پھانسی

مجھے چند سال پہلے اپنے ایک دوست کے ساتھ اس کے گاﺅں جانے کا اتفاق ہوا‘ یہ پنجاب کے ایک مشہور گاﺅں کے چودھری ہیں‘ میں ان کے مہمان خانے میں ٹھہرا ہوا تھا‘ سردیوں کے دن تھے‘ میں صبح اٹھا تو مہمان خانے کے صحن میں پنچایت ہو رہی تھی‘میں نے کھڑکی کھولی اور کارروائی دیکھنے لگا‘ ....مزید پڑھئے‎

مجھے چند سال پہلے اپنے ایک دوست کے ساتھ اس کے گاﺅں جانے کا اتفاق ہوا‘ یہ پنجاب کے ایک مشہور گاﺅں کے چودھری ہیں‘ میں ان کے مہمان خانے میں ٹھہرا ہوا تھا‘ سردیوں کے دن تھے‘ میں صبح اٹھا تو مہمان خانے کے صحن میں پنچایت ہو رہی تھی‘میں نے کھڑکی کھولی اور کارروائی دیکھنے لگا‘ ....مزید پڑھئے‎