قومی بچت اسکیم میں سرمایہ کاری کی چھان بین کیلئے 5 رکنی سپروائزری بورڈ قائم

  ہفتہ‬‮ 25 جنوری‬‮ 2020  |  23:28

اسلام آباد (این این آئی)قومی بچت اسکیم میں سرمایہ کاری کی چھان بین کیلئے بورڈ قائم کر دیا گیا اس سلسلے میں وزارت خزانہ نے ایڈیشنل فنانس سیکریٹری بجٹ کی سربراہی میں 5 رکنی سپروائزری بورڈ کا نوٹیفکیشن جاری کر دیا،بورڈ کے دیگر ممبران میں اسٹیٹ بینک کے ڈائریکٹر سید جہانگیر شاہ سیکورٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن کی ایڈیشنل ڈائریکٹر تنزیلہ نثار مرزا فنانشل مانیٹرنگ یونٹ کے ڈائریکٹر عدنان عمران اور وزارت خزانہ کے جوائنٹ سیکریٹری بی ون شامل ہیں۔ ذرائع کے مطابق بورڈ قومی بچت اور پاکستان پوسٹ کی سکیموں میں سرمایہ کاری کرنے والوں کی جانچ پڑتالکے عمل کی


نگرانی کرے گا،ایف اے ٹی ایف شرائط کے تحت قومی بچت سکیموں میں کالعدم قرار دی گئی تنظیموں اور انکے عہدیداران کی نشاندہی کی جائے گی۔ذرائع نے بتایاکہ پروگرام کے تحت قومی بچت سکیموں میں سرمایہ کاری کرنے والوں کی بائیو میٹرک ویری فکیشن کی جائے گی،قومی بچت سکیموں میں 70 لاکھ سرمایہ کاروں نے 4033 ارب روپے کی سرمایہ کاری کی ہوئی ہے۔حکومت نے اینٹی منی لانڈرنگ اور دہشتگردی کی مالی معاونت روکنے کیلئے قومی بچت سکیموں سے سرمایہ کاری کرنے والوں کی ذرائع آمدن کی جانچ پڑتال کا فیصلہ کیا ہے۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

مولانا روم کے تین دروازے

ہم تیسرے دروازے سے اندر داخل ہوئے‘ درویش اس کو باب گستاخاں کہتے تھے‘ مولانا کے کمپاﺅنڈ سے نکلنے کے تین اور داخلے کا ایک دروازہ تھا‘ باب عام داخلے کا دروازہ تھا‘ کوئی بھی شخص اس دروازے سے مولانا تک پہنچ سکتا تھا‘شاہ شمس تبریز بھی اسی باب عام سے اندر آئے تھے‘ مولانا صحن میں تالاب ....مزید پڑھئے‎

ہم تیسرے دروازے سے اندر داخل ہوئے‘ درویش اس کو باب گستاخاں کہتے تھے‘ مولانا کے کمپاﺅنڈ سے نکلنے کے تین اور داخلے کا ایک دروازہ تھا‘ باب عام داخلے کا دروازہ تھا‘ کوئی بھی شخص اس دروازے سے مولانا تک پہنچ سکتا تھا‘شاہ شمس تبریز بھی اسی باب عام سے اندر آئے تھے‘ مولانا صحن میں تالاب ....مزید پڑھئے‎