وزیر اعظم نے جتنی محنت کی اس کا نتیجہ نہیں ملا، شیخ رشید نے زندگی کا مقصد اور ملکی قرض بارے بات کرتے ہوئے ریٹائرمنٹ بارے دھماکہ خیز اعلان کر دیا

  ہفتہ‬‮ 25 جنوری‬‮ 2020  |  19:24

لاہور(این این آئی)وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید احمد نے کہا کہ 2020 انتخابات نہیں ملک کی ترقی کا سال ہے، میری زندگی کا مقصد ایم ایل ون ہے اور اس کے بعد سیاست سے ریٹائر ہوجاؤں گا، ایم ایل ون سے ایک لاکھ افراد کو روزگار ملے گا‘یکم مارچ سے پانچوں ڈرائی پورٹس کو دوباروہ شروع کریں گے، 10 سال میں ملک کے قرضے ادا کردیئے جائیں گے،سی پیک کے خلاف کوئی سازش کامیاب نہیں ہوگی،ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل کی رپورٹ جھوٹ کی آما جگاہ ہے، حکومت5 فروری کو کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کا دن بھرپور طریقے سے منائے گی،کابینہ اجلاس میں


گندم کی برآمدات کے خلاف ووٹ دیا تھا، ایک ووٹ کا لیڈر ہوں اور عمران خان جتنی میری بات مانتے ہیں وہی کافی ہے16ماہ میں جومسائل ہمیں ملے کسی اورحکومت کونہیں ملے، کوئی ہفتہ ایسا نہیں ہوتا جب حکومت نے کسی مسئلے سے نہ نمٹنا ہو،چینی 2روپے کم ہوئی ہے آئندہ کابینہ اجلاس میں مزید کم کراؤں گا،چینی کی قیمت میں اضافے کی ذمہ داری چینی مافیا ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے مغلپورہ ریلوے ڈرائی پورٹ میں فریٹ کنٹینر ٹرین کی افتتاحی تقریب سے خطاب اور میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔وفاقی وزیر شیخ رشید نے کہا کہ ایم ایل ون انقلابی اقدام ہے، موجودہ حکومت ہی اسے مکمل کرے گی، جب تک ایم ایل ون نہیں بنتا ریلوے ترقی نہیں کرسکتا، ایم ایل ون سے ایک لاکھ افراد کو روزگار ملے گا، میری خواہش ہے کہ غریب کو روزگار کی فراہمی ممکن ہو سکے، میری زندگی کا مقصد ایم ایل ون ہے اس کے بعد سیاست سے ریٹائر ہوجاؤں گا۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ حکومت 5 فروری کو کشمیری کے ساتھ اظہار یکجہتی کا دن منا رہی ہے، لال حویلی میں تاریخی جلسہ کیا جائے گا، پاکستان آزادی کی جدو جہد میں کشمیریوں کے شانہ بشانہ کھڑا ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ وزیر اعظم عمران خان نے جتنی محنت کی اس کا نتیجہ نہیں ملا، عمران خان ہر مشکل سے نکلنے کی صلاحیت رکھتے ہیں،10 سال میں ملک کے قرضے ادا کردیئے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف کی حکومت کو آتے ہی 40 سے زائد مسائل پیش تھے، 16 ماہ میں جو مسائل ہمیں ملے کسی اور حکومت کو نہیں ملے،کوئی ایسا ہفتہ نہیں گزرا جس میں حکومت کو مسائل سے نمٹنا نہ پڑا ہو۔ انہوں نے کہا کہ سی پیک کے خلاف کوئی سازش کامیاب نہیں ہوگی۔ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل کی رپورٹ جھوٹ کی آما جگاہ ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ 2020 انتخابات کا نہیں بلکہ ملک کی ترقی کا سال ہوگا،آئی ایم ایف مجبوری بن چکا ہے، معیشت کو اتنا مضبوط ہونا چاہیے کہ ہم آئی ایم ایف سے نکل جائیں، اگر معیشت مضبوط ہو گئی تو خارجہ پالیسی بھی مضبوط ہو جائے گی، 6 ارب ڈالر اگر کوئی اور دے دیتا تو آئی ایم ایف کے پا س نہ جاتے اور اس کی سزا پوری قوم بھگت رہی ہے۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان وزیر اعلی سردار عثمان بزدار کے ساتھ ہیں۔مہنگائی کے سوال پر شیخ رشید نے کہا کہ چینی کی قیمت میں اضافے کی ذمہ داری چینی مافیا ہے، قیمت دو روپے کم کرائی ہے آئندہ کابینہ کے اجلاس میں مزید کم کراؤں گا،کابینہ اجلاس میں گندم کی برآمدات کے خلاف ووٹ دیا تھا، ایک ووٹ کا لیڈر ہوں عمران خان جتنی بات سنتا ہے وہی کافی ہے،ملک میں پرائس کنٹرول کمیٹیاں مضبوط ہونی چاہیے۔انہوں نے کہا کہ یکم مارچ سے 5 ڈرائی پورٹس کھولنے جا رہے ہیں،ریلوے کی ترقی ملک کی ترقی ہے، فریٹ ٹرینوں پر ٹریکر نصب کیے جائیں گے، کنٹینر فریٹ ٹرین سے ریلوے کو خاطر خواہ ریونیو حاصل ہو گا، لاہور اور کراچی کے تاجروں کو درآمدی اور برآمدی اشیاء کے حصول میں آسانی ہو گی، مغلپورہ ڈرائی پورٹس سے کنٹینرز کی ہفتے میں دو ٹرینیں چلائی جائینگی، کنٹینر فریٹ ٹرین مغلپورہ ڈرائی پورٹ سے کراچی پورٹ تک چلے گی۔ انہوں نے کہا کہ مغلپورہ ڈرائی پورٹ سے فریٹ ٹرین آپریشن چار سال بعد شروع ہوا ہے،جلال آباد تک ریلوے ٹریک سے سمگلنگ ختم ہو جائیگی۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

بالا مستری

ہم اگر حضرت عمر فاروقؓ کی شخصیت کو دو لفظوں میں بیان کرنا چاہیں تو ”عدل فاروقی“ لکھ دینا کافی ہو گا‘ حضرت عمرؓ انصاف کے معاملے میں انقلابی تھے‘ یہ عدل کرتے وقت شریعت سے بھی گنجائش نکال لیتے تھے مثلاً حجاز اور شام میں قحط پڑا‘ لوگوں نے بھوک سے تنگ آ کر خوراک چوری کرنا ....مزید پڑھئے‎

ہم اگر حضرت عمر فاروقؓ کی شخصیت کو دو لفظوں میں بیان کرنا چاہیں تو ”عدل فاروقی“ لکھ دینا کافی ہو گا‘ حضرت عمرؓ انصاف کے معاملے میں انقلابی تھے‘ یہ عدل کرتے وقت شریعت سے بھی گنجائش نکال لیتے تھے مثلاً حجاز اور شام میں قحط پڑا‘ لوگوں نے بھوک سے تنگ آ کر خوراک چوری کرنا ....مزید پڑھئے‎