میاں صاحب وہ ایک بڑی پارٹی کی لیڈر ہیں‘ یہ آپ کیسی بات کررہے ہیں“ 1986میں جب بینظیر بھٹوپاکستان واپس آئیں تو نواز شریف نے ان کے خلاف کیا شرمناک منصوبہ بنا رکھا تھا،انہیں کس نے پھر روکا ، تہلکہ خیز انکشاف

  جمعرات‬‮ 27 دسمبر‬‮ 2018  |  6:00

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)چوہدری شجاعت حسین اپنی کتاب ’’سچ تو یہ ہے ‘‘میں انکشاف کرتے ہوئے لکھتے ہیں کہ بے نظیر بھٹو 10 اپریل1986ءکو پاکستان واپس آئیں ‘میاں نواز شریف محترمہ کو لاہور ائیرپورٹ سےگرفتار کرنا چاہتے تھے‘ ان کا کہنا تھا ”ہم محترمہ کو ائیر پورٹ ہی سے پک کر لیں گے“ لیکن وزیراعظم محمد خان جونیجو نے ڈانٹ کر کہا ”میاں صاحب وہ ایک بڑی پارٹی کی لیڈر ہیں‘ یہ آپ کیسی بات کررہے ہیں“۔چوہدری شجاعت مزید لکھتے ہیں کہ میاں نواز شریف 1988ءمیں لاہور ہائی کورٹ میں اپنی مرضی کا چیف جسٹس لگوانا چاہتے تھے‘ میں نے وزیراعظم کو


مشورہ دیا آپ سینئر ترین جج کو چیف لگا دیں‘ محمد خان جونیجو نے میری بات مان لی اور یوں جسٹس عبدالشکور سلام کو چیف جسٹس بنا دیا‘میں اطلاع دینے کےلئے چیف جسٹس کے گھر گیا تو میں یہ دیکھ کر حیران رہ گیا وہ دو کمروں کے معمولی سے گھر میں رہتے ہیں۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

ڈیڈ اینڈ

ارنسٹ ہیمنگ وے نوبل انعام یافتہ ادیب تھا اور یہ دہائیوں سے انسانی فکر کو متاثر کررہا ہے‘ ہم میں سے کم لوگ جانتے ہیں ہیمنگ وے نے اپنا کیریئر صحافی کی حیثیت سے شروع کیا تھا‘ یہ وار رپورٹر تھا‘ محاذ جنگ سے ڈائری لکھتا تھا اور لاکھوں لوگ اس کی تحریروں کا انتظار کرتے تھے‘ اس ....مزید پڑھئے‎

ارنسٹ ہیمنگ وے نوبل انعام یافتہ ادیب تھا اور یہ دہائیوں سے انسانی فکر کو متاثر کررہا ہے‘ ہم میں سے کم لوگ جانتے ہیں ہیمنگ وے نے اپنا کیریئر صحافی کی حیثیت سے شروع کیا تھا‘ یہ وار رپورٹر تھا‘ محاذ جنگ سے ڈائری لکھتا تھا اور لاکھوں لوگ اس کی تحریروں کا انتظار کرتے تھے‘ اس ....مزید پڑھئے‎