شریف خاندان کو بچانے کیلئے ظفر حجازی کیا کچھ کرتے رہے؟ایس ای سی پی افسران سب کچا چٹھا سامنے لے آئے

  جمعرات‬‮ 27 جولائی‬‮ 2017  |  15:28

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) ریکارڈ میں رد وبدل ظفر حجازی کے کہنے پر کی گئی، جی آئی ٹی میں پیشی کے بعدچیئرمین نے مجھے کمرے میں بند کر دیا اور کہالکھ کردوکہ جے آئی ٹی نے مجبورکرکے بیان لیا،ماہین فاطمہ، ایس ای پی سی پی افسران کا سینٹ کی قائمہ برائے خزانہ کے اجلاس میں بیان۔تفصیلات کے مطابق سینٹ کی قائمہ کمیٹی برائے خزانہ کا اجلاس سلیم مانڈوی والاکی زیرصدارت منعقد ہوا ۔ اجلاس میں چوہدری شوگر ملز کے ریکارد میں ردوبدل پر غور کیا گیا ۔ اس موقع پر اجلاس میں بیان دیتے ہوئے ایس ای سی پی عہدیدارعلی عظیم


اکرام نے کمیٹی کو بتایا جون 2013میں ظفرحجازی نے مجھے بلایاتو طاہرمحمود،ماہین فاطمہ،عابدحسین پہلے سے کمرے میں موجودتھے،ظفرحجازی نے کہاآپ نے یوکے اتھارٹیز کوخطوط کیوں لکھے،اگرآپ موجودہ تاریخ میں بندکرینگے توان لوگوں کیلئے مسئلہ ہوگا،جس پر سلیم مانڈوی والانے پوچھاظفرحجازی نے ایساکیوں کیا؟اس پر عابدحسین نے کہاظفرحجازی نے شایداس لئے کیاکہ پانامہ کیس شروع ہوچکاتھا۔چودھری شوگرملز میں ان لوگوں کے نام آتے ہیں،چیئرمین کی ہدایت پرکیس پرانی تاریخوں میں بندکیاگیا،جبکہ ماہین فاطمہ کا کہنا تھا جی آئی ٹی میں پیشی کے بعدچیئرمین نے مجھے کمرے میں بند کر دیا اور کہالکھ کردوکہ جے آئی ٹی نے مجبورکرکے بیان لیا،ماہین فاطمہ نے بتایامجھے سینئرکمشنرطاہر محمود نے چھڑایا۔ظفرحجازی نے شایداس لئے کیاکہ پانامہ کیس شروع ہوچکاتھا۔چودھری شوگرملز میں ان لوگوں کے نام آتے ہیں،چیئرمین کی ہدایت پرکیس پرانی تاریخوں میں بندکیاگیا،جبکہ ماہین فاطمہ کا کہنا تھا جی آئی ٹی میں پیشی کے بعدچیئرمین نے مجھے کمرے میں بند کر دیا اور کہالکھ کردوکہ جے آئی ٹی نے مجبورکرکے بیان لیا،ماہین فاطمہ نے بتایامجھے سینئرکمشنرطاہر محمود نے چھڑایا۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

کارٹرفارمولا

جمی کارٹر امریکا کے 39ویں صدر تھے‘ یہ 1977ءسے 1981ءتک دنیا کی سپر پاور کے سربراہ رہے‘ یہ 1924ءمیں جارجیا کے چھوٹے سے گاﺅں پلینز میں پیدا ہوئے ‘ زمین دار فیملی کے ساتھ تعلق تھا‘ والد مونگ پھلی اگاتے تھے‘ جوانی میں نیوی جوائن کر لی‘ والد کے انتقال کے بعد کھیتی باڑی شروع کر دی‘یہ بھی ....مزید پڑھئے‎

جمی کارٹر امریکا کے 39ویں صدر تھے‘ یہ 1977ءسے 1981ءتک دنیا کی سپر پاور کے سربراہ رہے‘ یہ 1924ءمیں جارجیا کے چھوٹے سے گاﺅں پلینز میں پیدا ہوئے ‘ زمین دار فیملی کے ساتھ تعلق تھا‘ والد مونگ پھلی اگاتے تھے‘ جوانی میں نیوی جوائن کر لی‘ والد کے انتقال کے بعد کھیتی باڑی شروع کر دی‘یہ بھی ....مزید پڑھئے‎