کیپٹن(ر)صفدر کی گرفتاری پی ڈی ایم کے سربراہ مولانا فضل الرحمن نے بڑ ااعلان کردیا

  پیر‬‮ 19 اکتوبر‬‮ 2020  |  16:35

اسلام آباد، کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک، آن لائن)پی ڈی ایم کے سربراہ مولانا فضل الرحمن نے کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کی گرفتاری کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے انہیں فوری طور پر رہا کرنے کا مطالبہ کردیا، کراچی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہکیپٹن(ر)صفدرکی گرفتاری قابل مذمت ہے،وزیراعلیٰ سندھ کوگرفتاری سے بے خبررکھاگیا،وفاقی حکومت خودکوقانون کی پابندنہیں سمجھتی، سیاستدان آئین وقانون کے تحت مظاہرے کررہے ہیں،ملک میں آمرانہ ذہنیت خودکوقانون سے بالاترسمجھتی ہے،لگتاہے حکمرانوں کے دن گنے جاچکے ہیں،سندھ حکومت معاملے پراپناموقف دے چکی ہے،ن لیگ اورپیپلزپارٹی میں اختلاف پیداکرنے کی کوشش کی گئی،انہوں نے مزید کہا کہ مریم


صفدر پی ڈی ایم کی لیڈر نہیں ہماری بیٹی اور بہن بھی ہے اور کیپٹن صفدر کو گرفتار کر کے ہماری حرمت پر حملہ کیا گیا لیکن ہم اپنی حرمت کا دفاع کرنا جانتے ہیں۔دریں اثناوزیر بلدیات و اطلاعات سندھ ناصر حسین شاہ کا کہنا ہے کہ صوبائی حکومت نے پی ایم ایل این کے رہنما کیپٹن (ر) صفدر کی گرفتاری کا سخت نوٹس لیا ہے اور اس معاملے پر اعلیٰ سطح کی انکوائری کرائی جائے گی۔میڈیا سے گفتگو کرتے ہوے وزیر بلدیات و اطلاعات سندھ ناصر حسین شاہ نے کہا (ن) لیگ کے رہنماؤں کی مزارقائد پر حاضری کے دوران جو واقع پیش آیا وہ نہیں ہونا چاہیے تھا، پی ٹی آئی کے رہنماؤں نے کیس داخل کرنے کے لیے الگ الگ پولیس کو درخواستیں دیں تاہم پولیس نے درخواستوں کو غیرقانونی قرار دیکر خارج کردیا۔ اس کے بعد قائد اعظم بورڈ نے پولیس کو درخواست دیجس پر پولیس نے قائداعظم بورڈ کو مجسٹریٹ کے سامنے درخواست دینے کا مشورہ دیا۔ناصر حسین شاہ نے کہا کہ اس دوران ایک شخص نے پولیس کو درخواست دی کہ کیپٹن (ر) صفدر نے اس کو جان سے مارنے کی دھمکی دی جس پر پولیس نے ایف آئی آر درج کرکےتفتیش شروع کردی تاہم تفتیش سے پہلے چار دیواری کا تقدس پامال کرکے کیپٹن (ر) صفدر کو گرفتار کرنا قابل مذمت ہے۔وزیر اطلاعات سندھ کا کہنا تھا کہ حکومت سندھ نے پی ایم ایل این کے رہنما کیپٹن (ر) صفدر کی گرفتاری کا سخت نوٹس لیا ہے اور اس معاملے پر اعلیٰ سطحانکوائری کرائی جائے گی، یہ سارا کھیل وفاقی حکومت کی ایما پر ہوا ہے، اس تمام کارروائی سے پہلے حکومت سندھ کو کسی بھی سطح پر آگاہ نہیں کیا گیا۔دوسری جانب مزار قائد بے حرمتی کیس میں کیپٹن (ر) صفدر کی گرفتاری پر ترجمان سندھ پولیس نے سماجی رابطے کی سائٹ ٹوئٹر پر آفیشل ٹوئٹ میں کہا کہ لیگی رہنما کیپٹن (ر) صفدر کی گرفتاری قانون کے مطابق ہوئی ہے تاہم کچھ ہی دیر بعد ٹوئٹ کو ڈیلیٹ کردیا گیا۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

بڑے چودھری صاحب

انیس سو ساٹھ کی دہائی میں سیالکوٹ میں ایک نوجوان وکیل تھا‘ امریکا سے پڑھ کر آیا تھا‘ ذہنی اور جسمانی لحاظ سے مضبوط تھا‘ آواز میں گھن گرج بھی تھی اور حس مزاح بھی آسمان کو چھوتی تھی‘ یہ بہت جلد کچہری میں چھا گیا‘ وکیلوں کے ساتھ ساتھ جج بھی اس کے گرویدا ہو گئے‘ اس ....مزید پڑھئے‎

انیس سو ساٹھ کی دہائی میں سیالکوٹ میں ایک نوجوان وکیل تھا‘ امریکا سے پڑھ کر آیا تھا‘ ذہنی اور جسمانی لحاظ سے مضبوط تھا‘ آواز میں گھن گرج بھی تھی اور حس مزاح بھی آسمان کو چھوتی تھی‘ یہ بہت جلد کچہری میں چھا گیا‘ وکیلوں کے ساتھ ساتھ جج بھی اس کے گرویدا ہو گئے‘ اس ....مزید پڑھئے‎