الیکشن کمیشن نے کٹھ پتلی حکمران اتحاد کے فرار کا آخری راستہ بھی بند کر دیا، حیران کن دعویٰ 

  بدھ‬‮ 3 مارچ‬‮ 2021  |  0:01

اسلام آباد (آن لائن) پاکستان پیپلز پارٹی کے مرکزی رہنما  سینیٹر مولابخش چانڈیو نے کہا ہے کہ الیکشن کمیشن نے کٹھ پتلی حکمران اتحاد کے فرار کا آخری راستہ بھی بند کر دیا ،سپریم کورٹ کی رائے کی من مانی تشریح کرنے والے اب منہ چھپا کر روئیں گے،عمران خان سلیکٹڈ ہیںاس لئے سینیٹ میں الیکشن کی جگہ سلیکشن چاہتے تھے سپریم کورٹ سے نامراد لوٹنے کے بعد الیکشن کمیشن کو بلیک میل کرنے کی کوشش کی گئی  ۔اپنے ایک بیان میں سینیٹر مولابخش چانڈیو نے کہا کہ الیکشن کمیشن پر دبائو ڈالا گیا کی اگر قابل شناخت ووٹ کے


ذریعے انتخابات نہ ہوئے تو توہین عدالت ہوگی،ایک آئینی ادارے کے کام میں مسلسل مداخلت کرنے کی کوشش کی گئی ،الیکشن کمیشن کے فیصلے سے جمہوریت کی جیت اور کٹھ پتلی راج کو شکست ہوئی ہے، ہر محاذ کی طرح اب سینیٹ کے انتخابات کے محاذ پر بھی عمران خان کو شکست ہوگی ،انہوں نے کہا کہ یوسف رضا گیلانی کی جیت قوم کیلئے ہائبرڈ نظام سے نجات کا راستہ فراہم کرے گی ،چیئرمن بلاول بھٹو زرداری اور آصف زرداری کی مدبرانہ قیادت نے قوم کو نجات کی منزل کے قریب پہنچا دیا ہے،پی ڈی ایم کی قیادت کے اتحاد سے قوم کو جلد حقیقی جمہوریت کی بحالی کی نوید ملے گی ۔


زیرو پوائنٹ

راﺅنڈ اباﺅٹ

اندر کمار گجرال بھارت کے 12 ویں وزیراعظم تھے‘ یہ 1997ءاور 1998ءکے درمیان ایک سال وزیراعظم رہے‘ اٹل بہاری واجپائی ان کے بعد وزیراعظم بنے تھے‘ گجرال جہلم میں پیدا ہوئے تھے‘ ان کی ساری تعلیم جہلم اور لاہور کی تھی اور یہ دل سے پاکستان اور بھارت کے تعلقات بہتر دیکھنا چاہتے تھے‘ میاں نواز شریف کے ....مزید پڑھئے‎

اندر کمار گجرال بھارت کے 12 ویں وزیراعظم تھے‘ یہ 1997ءاور 1998ءکے درمیان ایک سال وزیراعظم رہے‘ اٹل بہاری واجپائی ان کے بعد وزیراعظم بنے تھے‘ گجرال جہلم میں پیدا ہوئے تھے‘ ان کی ساری تعلیم جہلم اور لاہور کی تھی اور یہ دل سے پاکستان اور بھارت کے تعلقات بہتر دیکھنا چاہتے تھے‘ میاں نواز شریف کے ....مزید پڑھئے‎