پی ایس او میں 307 ارب کی بے ضابطگیوں کا انکشاف عدم وصولیوں پرمزید کتنانقصان ہوا؟آڈٹ رپورٹ جاری

  ہفتہ‬‮ 21 ستمبر‬‮ 2019  |  14:38

کراچی(این این آئی)پی ایس اومیں 307ارب57کروڑ سے زائد کی مالی بے ضابطگیاں کا انکشاف، آڈیٹر جنرل کی آڈٹ رپورٹ میں جہاں پاکستان اسٹیٹ آئل کی مالی بے ضابطگیوں سے ہونیوالے نقصان کا تخمینہ لگایاہے۔گزشتہ مالی سال پی ایس او کی آمدن کی تفصیلات بھی جاری کی ہیں، پی ایس او کے خالص منافع کی شرح 2017.18 میں 3.75 فیصد رہی جس سے کمپنی کو 15 ارب 46کروڑ روپے کا منافع اس کے برعکس 17 2016. میں کمپنی کو 18 ارب 22 کروڑکا منافع ہوا، پی ایس او انتظامیہ وصولیوں میں ناکام رہی جس سے کمپنی کو 224 ارب 47 کروڑ


24 لاکھ کا نقصان ہوا ہے۔آڈٹ حکام کے مطابق واجب الادا رقوم مزید تاخیر سے بدترین قرضہ کی شکل اختیار کر سکتی ہے، اداروں کے ذمہ واجبات کے بیشتر مقدمات ایف آئی اے میں زیر التوا ہیں۔رپورٹ کے مطابق پی ایس او کی جانب سے وصولیوں پر سود کی شرح بھی وصول کرنے میں ناکام رہی ہے جس سے ادارے کو 82 ارب 80 کروڑ نقصان کا سامنا کرنا پڑا۔

موضوعات:

loading...