ٹیکس ایمنسٹی اسکیم،پاکستانیوں نے 10 کھرب روپے کے اثاثے قانونی بنا لیے،امارات، سنگاپور، برطانیہ اور کینیڈا،سوئٹزرلینڈمیں پڑا کتنا کالا دھن سفید کیاگیا؟غیرملکی جریدے کی رپورٹ

  منگل‬‮ 25 جون‬‮ 2019  |  22:26

اسلام آباد (این این آئی)ٹیکس ایمنسٹی اسکیم سے فائدہ اٹھاتے ہوئے پاکستانیوں نے 10 کھرب روپے کے اثاثے قانونی بنا لیے ہیں۔غیرملکی جریدے میں شائع رپورٹ میں بتایا گیا کہ ان میں متحدہ عرب امارات، سنگاپور، برطانیہ اور کینیڈا سمیت دیگر کئی ممالک شامل ہیں۔جریدے کے مطابق سب سے زیادہ متحدہ عرب امارات میں موجود 346 ارب روپے کے اثاثے سفید کیے گئےجبکہ 114 ارب روپے کے اثاثے سوئٹزر لینڈ میں سامنے لائے گئے جبکہ برطانیہ میں 89 ارب اور سنگاپور میں 87 ارب کا کالا دھن سفید کیا گیا۔واضح رہے کہ پاکستان میں ٹیکس ایمنسٹی اسکیم 30 جون 2019


کو ختم ہو جائے گی۔ڈائریکٹر جنرل انٹرنیشنل ٹیکس ایف بی آر ڈاکٹر محمد اشفاق احمد نے کہا کہ پاکستان اور متحدہ عرب امارات میں معلومات کے تبادلے کا دو طرفہ معاہدہ ہے جس کے تحت بینک معلومات بھی شیئر کی جاتی ہیں۔انہوں نے کہا کہ ٹیکس ایمنسٹی اسکیم کا مقصد غیر ظاہر شدہ اثاثے ظااہر کرنا ہے تاکہ ملکی معیشت کو بہتر بنایا جا سکے۔ڈاکٹر اشفاق کے مطابق پاکستان کو گزشتہ سال 28 ممالک میں پاکستانیوں کے اثاثوں کی معلومات حاصل ہو چکی ہیں جبکہ ا?ئندہ 2 سے 3 برسوں میں 100 سے زائد ممالک سے رابطہ ہو جائے گا۔انہوں نے تنبیہ کی کہ یہ بین الاقوامی سطح پر شفافیت کا دور ہے اور ترقی یافتہ ممالک نے رازداری کے قوانین کا خاتمہ کر دیا ہے۔محمد اشفاق کا کہنا تھا کہ اب ترقی یافتہ ممالک دوسرے ملکوں کے باشندوں کی معلومات کا تبادلہ کرتے ہیں جس کے باعث اپنے اثاثے چھپانا ممکن نہیں رہے گا۔

loading...