پشاور پی ایس ایل کی میزبانی کریگا یا نہیں؟ پی سی بی نے حتمی اعلان کردیا

  جمعرات‬‮ 24 ستمبر‬‮ 2020  |  17:52

پشاور( آن لائن )پاکستان کرکٹ بورڈ نے پشاور کو پی ایس ایل کی میزبانی دینے سے معذرت کرلی۔ ارباب نیاز کرکٹ سٹیڈیم کے بعد حیات آباد کرکٹ سٹیڈیم بھی بروقت مکمل نہ ہونے پر پاکستان کرکٹ بورڈ نے پشاور کو پی ایس ایل کی میزبانی دینے سے معذرت کرلی ۔جبکہ فیصلے سے متعلق صوبائی حکومت کو آگاہ کردیا ہے۔ پی ایس ایل کے چھٹے سیزن کے لیے پشاور کو بھی میزبانی دینے کا اعلان کیا گیا تھا اور پشاور کے ارباب نیاز کرکٹ سٹیڈیم کو جدید طرز پر بنانے کے لیے منصوبہ شروع کیا گیا لیکن منصوبہ بروقت مکمل نہ


ہونے کی وجہ سے پی ایس ایل کے میچز کے انعقاد کو ناممکن قراردیا گیا تاہم وزیراعلی محمود خان کی خواہش پر پی ایس ایل کے میچز کے انعقاد کو ممکن بنانے کے لیے حیات آباد کرکٹ سٹیڈیم کو توسیع دینے پر کام شروع کیا گیا لیکن پی سی بی کی ٹیم کے معائنے کے بعد رپورٹ کی روشنی میں پاکستان کرکٹ بورڈ نے پشاور کو میزبانی سے معذرت کرلی ہے۔ذرائع نے بتایا کہ پی سی بی نے اس حوالے سے صوبائی حکومت کو باقاعدہ طور پر آگاہ کردیا ہے کہ بین الاقوامی کرکٹ میچوں کے لیے آئی سی سی کے شرائط مکمل نہ ہونے پر پشاور کو پی ایس ایل کی میزبانی نہیں دی جاسکتی، اس حوالے سے ڈی جی سپورٹس اسفندیار خٹک سے رابطے کی کوشش کی گئی لیکن مصروفیات کے باعث جواب نہ مل سکا۔پی سی بی کے ڈائریکٹر میڈیا سمیع الحسن سے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے بتایا کہ پی ایس ایل کی تیاری کے لیے کم وقت رہ گیا ہے اور پشاور میں کرکٹ سٹیڈیم تعمیر نہ ہوسکا اس لیے اگلے پی ایس ایل کی میزبانی پشاور کو نہیں مل سکتی اس حوالے سے صوبائی حکومت کو بھی آگاہ کردیا گیا ہے۔انہوں نے بتایا کہ پی ایس ایل سے قبل غیر ملکی ٹیموں کو بتانا ہوتا ہے کہ کن کن شہروں میں میچوں کا انعقاد کیا جارہا ہے، آئی سی سی کی شرائط پوری کرنی ہوتی ہیں جبکہ سیکورٹی صورتحال کا بھی جائزہ لینا ہوتا ہے اس لیے پشاور میں انتظامات مکمل ہونے کے باعث پی ایس یل کی میزبانی ممکن نہیں۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

ڈائیلاگ اور صرف ڈائیلاگ

سینٹ ہونو رینا  فرانس کے علاقے نارمنڈی سے تعلق رکھتی تھیں‘ یہ کیتھولک نن تھیں‘ کنواری تھیں‘ نارمنڈی میںکیتھولک کا قتل عام شروع ہوا تو سینٹ ہونورینا کو بھی مار کر نعش دریائے سین میں پھینک دی گئی‘ یہ نعش بہتی بہتی کون فلوینس  پہنچ گئی‘ کون فلوینس پیرس سے 24 کلومیٹر کے فاصلے پر چھوٹا سا گاﺅں ....مزید پڑھئے‎

سینٹ ہونو رینا  فرانس کے علاقے نارمنڈی سے تعلق رکھتی تھیں‘ یہ کیتھولک نن تھیں‘ کنواری تھیں‘ نارمنڈی میںکیتھولک کا قتل عام شروع ہوا تو سینٹ ہونورینا کو بھی مار کر نعش دریائے سین میں پھینک دی گئی‘ یہ نعش بہتی بہتی کون فلوینس  پہنچ گئی‘ کون فلوینس پیرس سے 24 کلومیٹر کے فاصلے پر چھوٹا سا گاﺅں ....مزید پڑھئے‎