بارش سے مویشی منڈیاں دلدل کا منظر پیش کرنے لگیں، بیوپاری اور خریدار پریشان

26  جون‬‮  2023

لاہور ( این این آئی) پری مون سون کی گرج چمک کے ساتھ ہونے والی موسلادھا بارش نے انتظامیہ کی کارکردگی کا پول کھول دیا، شہر میں عید قربان کے موقع پر لگائی جانے والی 10 عارضی مویشی منڈیاں نکاسی آب نہ ہونے کی وجہ سے درہم برہم ہو گئیں۔تیز ہوا اور مسلسل بارش سے منڈیوں میں لگے شامیانے اکھڑ گئے جبکہ متعدد جگہیں دلدل کا منظر پیش کرنے لگیں، صورتحال کے باعث بیوپاری اور خریدار دونوں ہی پریشان ہوگئے۔

عارضی منڈیوں میں دوبارہ لائٹس ٹاور کو بھی فعال نہیں کیا جا سکا۔ایل ڈی اے سٹی، پائن ایونیو، ڈیفنس نائن، پائن ایونیو ون مویشی منڈی میں شامیانے اکھڑ گئے، سگیاں روڈ ، شاہ پور کانجراں، سندر اور حضرت عثمان غنی روڈ منڈی میں شامیانے فعال نہیں ہو سکے، منڈیوں میں جانوروں کے پانی پینے کیلئے بنائی جانے والی سینکڑوں عارضی کھرلیاں بھی ٹوٹ پھوٹ گئیں۔کاہنہ رائیونڈ مانگا منڈی، این ایف سی منڈی بھی تاحال مکمل فعال نہیں ہوسکیں، لکھو ڈیر منڈی میں بھی تاحال سہولیات کا فقدان ہے۔منڈیوں میں بارش سے جگہ جگہ کیچڑ دلدل میں تبدیل ہوگیا، بارشی پانی کی وجہ سے ٹریفک اور پارکنگ کیلئے مختص جگہ کیچڑ میں تبدیل ہو چکی ہے، کمشنر لاہور کی طرف سے منڈیاں دوبارہ فعال کرنے کے احکامات جاری کر دیئے گئے۔بارش رکنے کے بعد انتظامیہ نے عارضی منڈیوں میں دوبارہ انتظامات شروع کئے اور نکاسی آب کے لئے ڈی واٹرنگ سیٹ لگا دیئے گئے۔رات کے اوقات میں لائٹس کی عدم دستیابی کے باعث مویشی منڈیاں اندھیرے میں ڈوبی رہیں، بیوپاریوں نے نگران وزیر اعلی پنجاب محسن نقوی سے اپیل کرتے ہوئے کہا ہے کہ منڈیوں کو فورا روشن کیا جائے۔بیوپاریوں کا کہنا ہے کہ لاکھوں روپے مالیت کے جانور لائے ہیں لیکن قانونی حفاظت نہ ہونے کے برابر ہے، اس صورتحال میں جانوروں کے بیمار ہونے کا بھی اندیشہ ہے۔ادھر خریداروں نے بھی مویشی منڈیوں میں انتظامات بہتر بنانے کا مطالبہ کیا ہے۔دوسری جانب چیف کارپوریشن آفیسر میاں ثاقب کا کہنا ہے کہ بارش کا مقابلہ نہیں مگر عارضی منڈیوں کو فعال کرنے کے لئے عملہ کام میں مصروف عمل ہے، جلد دوبارہ منڈیاں مکمل فعال ہو جائیں گی۔

موضوعات:



کالم



مرحوم نذیر ناجی(آخری حصہ)


ہمارے سیاست دان کا سب سے بڑا المیہ ہے یہ اہلیت…

مرحوم نذیر ناجی

نذیر ناجی صاحب کے ساتھ میرا چار ملاقاتوں اور…

گوہر اعجاز اور محسن نقوی

میں یہاں گوہر اعجاز اور محسن نقوی کی کیس سٹڈیز…

نواز شریف کے لیے اب کیا آپشن ہے (آخری حصہ)

میاں نواز شریف کانگریس کی مثال لیں‘ یہ دنیا کی…

نواز شریف کے لیے اب کیا آپشن ہے

بودھ مت کے قدیم لٹریچر کے مطابق مہاتما بودھ نے…

جنرل باجوہ سے مولانا کی ملاقاتیں

میری پچھلے سال جنرل قمر جاوید باجوہ سے متعدد…

گنڈا پور جیسی توپ

ہم تھوڑی دیر کے لیے جنوری 2022ء میں واپس چلے جاتے…

اب ہار مان لیں

خواجہ سعد رفیق دو نسلوں سے سیاست دان ہیں‘ ان…

خودکش حملہ آور

وہ شہری یونیورسٹی تھی اور ایم اے ماس کمیونی کیشن…

برداشت

بات بہت معمولی تھی‘ میں نے انہیں پانچ بجے کا…

کیا ضرورت تھی

میں اتفاق کرتا ہوں عدت میں نکاح کا کیس واقعی نہیں…