حکومت کے 50 دن اور آئی ایم ایف کے فیصلے کو 8 دن رہ گئے ہیں’ شیخ رشید

22  جون‬‮  2023

لاہور( این این آئی)سابق وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ حکومت کے 50 دن اور آئی ایم ایف کے فیصلے کو 8 دن رہ گئے ہیں، پاکستان میں کوئی شعبہ ایسا نہیں ہے جہاں عدم استحکام نہیں، معیشت تباہ، ریاست بدحال، سیاست کا برا حال ہے۔

ٹوئٹر پر جاری اپنے بیان میں شیخ رشید نے کہا کہ 2 کروڑ لوگ بے روزگار، 10 کروڑ خطہ غربت کی لکیر سے نیچے اور ڈیفالٹ کی تلوار سر پر لٹک رہی ہے، دیکھتے ہیں شہباز شریف فرانس سے آئی ایم ایف کو منوا کر آتے ہیں یا منہ لٹکا کے آتے ہیں۔ ملک وینٹی لیٹر پر ہے جب انڈسٹری نہیں چلے گی توروزگارنہیں ملے گااوربیروزگاربھوک کے مارے سمندروں میں ڈوب کر مریں گے ،یہ کہتے تھے ہم آئیں گے تودودھ شہد کی نہریں بہیں گی لیکن انہوں نے مہنگائی بیروزگاری کاطوفان کھڑاکردیا ہے ،ڈارکہتاتھاڈالر200کاکروں گا،آئی ایم ایف کے لئے امریکہ ،برطانیہ کے سفیروں کے پائوں میں ۔انہوں نے کہا کہ جو 50 سال سے یہاں سرمایہ کاری کر رہے تھے وہ بھی اپنے شیئر زبیچ کر جا رہے ہیں ،جب پاکستانی ہی سرمایہ کاری نہیں کریں گے تو آئین و قانون کی تضحیک کی موجودگی میں کون غیر ملکی سرمایہ کار پاکستان آئے گا۔ انہوںنے کہا کہ پولیس گھروں میں گھس کے توڑپھوڑ کررہی ہے چادراورچاردیواری کو رسواکررہی ہے ،اتنی ملک میں گندم نہیں کاٹی جارہی جتنی پولیس جھوٹی ایف آئی آر کاٹ رہی ہے ،جھوٹے کیسوں کاجمعہ بازار اورکرپشن کا انبارلگاہے ،جس کو چاہتے ہیں اٹھا لیتے ہیں ،ایک کیس میں ضمانت ہونے پردوسری ریڈی میٹ ایف آئی آر جیل کے دروازے پرمنتظرہوتی ہے۔انہوں نے کہا کہ جو منی لانڈرنگ اور نیب میں مطلوب تھے وہ حکمران بنا دیئے گئے ،جن کو جیلوں میں ہونا چاہیے تھا وہ غیرملکی دوروں پر ہیں۔

موضوعات:



کالم



فواد چودھری کا قصور


فواد چودھری ہماری سیاست کے ایک طلسماتی کردار…

ہم بھی کیا لوگ ہیں؟

حافظ صاحب میرے بزرگ دوست ہیں‘ میں انہیں 1995ء سے…

مرحوم نذیر ناجی(آخری حصہ)

ہمارے سیاست دان کا سب سے بڑا المیہ ہے یہ اہلیت…

مرحوم نذیر ناجی

نذیر ناجی صاحب کے ساتھ میرا چار ملاقاتوں اور…

گوہر اعجاز اور محسن نقوی

میں یہاں گوہر اعجاز اور محسن نقوی کی کیس سٹڈیز…

نواز شریف کے لیے اب کیا آپشن ہے (آخری حصہ)

میاں نواز شریف کانگریس کی مثال لیں‘ یہ دنیا کی…

نواز شریف کے لیے اب کیا آپشن ہے

بودھ مت کے قدیم لٹریچر کے مطابق مہاتما بودھ نے…

جنرل باجوہ سے مولانا کی ملاقاتیں

میری پچھلے سال جنرل قمر جاوید باجوہ سے متعدد…

گنڈا پور جیسی توپ

ہم تھوڑی دیر کے لیے جنوری 2022ء میں واپس چلے جاتے…

اب ہار مان لیں

خواجہ سعد رفیق دو نسلوں سے سیاست دان ہیں‘ ان…

خودکش حملہ آور

وہ شہری یونیورسٹی تھی اور ایم اے ماس کمیونی کیشن…