سوشل میڈیا پر زیر گردش منفرد” فروری” کی حقیقت کھل کر سامنے آگئی ، قصہ ہی ختم

  منگل‬‮ 19 جنوری‬‮ 2021  |  10:57

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)سوشل میڈیا پر ایک پیغام زیرگردش ہے جس کا حقیت سے کوئی تعلق نہیں کہ رواں برس یعنی 2021کا فروری اس صدی کا سب سے منفرد مہینہ ہو گا۔''انسا نی زندگی میں یہ ماہ دوبارہ نہیں آئے گا، رواںفروری میں چار اتوار، چا ر پیر، چا ر منگل، چاربدھ، چار جمعرات، چا ر جمعہ اور چار ہفتوں پر مشتمل ہو گا۔ ہفتے کے سا ت دنو ں میں چار کی تعداد پر مشتمل فروری 823سال بعد دوبارہ آئے گا ،مو جو دہ صدی کے انسان پہلی مر تبہ منفرد فرروری کا تجر بہ کر ینگے ''ایسے پیغام میں


نام نہاد روایات کا سہارا لیا جارہا کہ جیسا کہ چینیو ں کے مطا بق ان دنو ں کو money bags (دولت کے بیگز)قرار دیا جاتا ہے۔ فروری کے متعلق میسج کو فارورڈ کرکے غیر متو قع دولت مل سکتی ہے ۔ روزنامہ جنگ میں رفیق مانگٹ کی شائع خبر کے مطابق حقیقت یہ ہے کہ 2012،2016، 2020،2024اور 2028لیپ کے سال ہیں ان میں فروری 29دنوں پر مشتمل ہےجس میں یہ ترتیب نہیں رہتی ، لیپ کے سالوں کے علاوہ فروری28دنوں پر مشتمل ہے اور ان میں ہمیشہ ہر دن چار بار دہرایا جاتا ہے ۔ 2015، 2017،2018، اور2019 میں بھی فروری میں چار اتوار، چا ر پیر، چا ر منگل، چاربدھ، چار جمعرات، چا ر جمعہ اور چار ہفتے تھے، آئندہ2021، 2022، 2023،2025، 2026اور2027میں بھی چاراتوار، چا ر پیر، چا ر منگل، چاربدھ، چار جمعرات، چا ر جمعہ اور چار ہفتے ہی ہوں گے۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ لیپ کے سال کے علاوہ ہر فروری سے قبل یہ میسج سوشل میڈیا کی زینت بنتا ہے اور لوگ بغیر تحقیق اسے فارورڈ کرتے ہیں کئی اخبارات نے بھی اسے حقیقت سمجھ کے گزشتہ سالوں میں شائع کیا۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

آخری موو

سینیٹ کا الیکشن کل اور پلاسی کی جنگ 23 جون 1757ءکو ہوئی اور دونوںنے تاریخ پر اپناگہرا نقش چھوڑا‘ بنگال ہندوستان کی سب سے بڑی اور امیر ریاست تھی‘پورا جنوبی ہندوستان نواب آف بنگال کی کمان میں تھا‘ سراج الدولہ بنگال کا حکمران تھا‘ دوسری طرف لارڈ رابرٹ کلائیو کمپنی سرکار کی فوج کا کمانڈر تھا‘ انگریز کے ....مزید پڑھئے‎

سینیٹ کا الیکشن کل اور پلاسی کی جنگ 23 جون 1757ءکو ہوئی اور دونوںنے تاریخ پر اپناگہرا نقش چھوڑا‘ بنگال ہندوستان کی سب سے بڑی اور امیر ریاست تھی‘پورا جنوبی ہندوستان نواب آف بنگال کی کمان میں تھا‘ سراج الدولہ بنگال کا حکمران تھا‘ دوسری طرف لارڈ رابرٹ کلائیو کمپنی سرکار کی فوج کا کمانڈر تھا‘ انگریز کے ....مزید پڑھئے‎