شہریوں نے گٹروں پر منتخب اراکین کی تصاویر لگا دیں،حیرت انگیز احتجاج

  جمعہ‬‮ 14 اگست‬‮ 2020  |  0:33

فیصل آباد (این این آئی) پنجا ب کے شہر فیصل آباد کی گلیوں میں گٹر ابلنے لگے جس نے شہریوں کا جینا محال کر دیا۔فیصل آباد کے شہری علاقوں کی گلیاں کئی ماہ سے سیوریج کے پانی میں ڈوبی ہوئی ہیں۔علاقہ مکینوں کے مطابق بدبودار پانی کی وجہ بچے اور بوڑھے گھروں میں قید ہیں ، گندگی کی وجہ سے مہمانوں نے گھروں میں آنا بھی چھوڑ دیا ہے۔شہریوں نے کہاکہ سیوریج نظام ٹھیک کرنے کوئی آتا نہیں،علاقہ اتنا پریشان ہے کوئی کسی کو مہمان بھی نہیں بلوا سکتا ہے اور اگر کوئی مہمان آنا چاہے وہ بھی گندگی کی


وجہ سے نہیں آسکتا۔ایک شہری نے بتایا کہ سیوریج کا مسئلہ کافی عرصے سے چل رہا ہے، ہمارے گھروں میں رات میں اتنا پانی جمع ہو جاتا ہے کہ بدبو آنا شروع ہو جاتی ہے، بدبو کی وجہ سے نیند نہیں آتی اور گندگی کی وجہ سے بچے بیمار بھی ہو جاتے ہیں۔علاقہ مکینوں کے مطابق ان مشکل حالات میں منتخب نمائندے بھی غائب ہو گئے ہیں۔بدبو اور تعفن سے تنگ شہریوں نے ابلتے گٹروں پر مفرور ارکان اسمبلی کی تصاویر لگا دیں۔چیئرمین واسا کا کہنا ہے کہ سمن آباد کے علاقے میں سوریج کے مرکزی لائن بند ہونے کی وجہ سے کئی علاقوں کی گلیوں میں پانی کھڑا ہونے کی شکایات ہیں، اس مسئلے کو حل کرنے کے لیے واسا کی ٹیمیں کام کر رہی ہیں، جلد اس مسلے کو حل کر لیا جائے گا۔  پنجا ب کے شہر فیصل آباد کی گلیوں میں گٹر ابلنے لگے جس نے شہریوں کا جینا محال کر دیا۔فیصل آباد کے شہری علاقوں کی گلیاں کئی ماہ سے سیوریج کے پانی میں ڈوبی ہوئی ہیں۔علاقہ مکینوں کے مطابق بدبودار پانی کی وجہ بچے اور بوڑھے گھروں میں قید ہیں ، گندگی کی وجہ سے مہمانوں نے گھروں میں آنا بھی چھوڑ دیا ہے۔شہریوں نے کہاکہ سیوریج نظام ٹھیک کرنے کوئی آتا نہیں، علاقہ اتنا پریشان ہے کوئی کسی کو مہمان بھی نہیں بلوا سکتا ہے اور اگر کوئی مہمان آنا چاہے وہ بھی گندگی کی وجہ سے نہیں آسکتا۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

سرعام پھانسی

مجھے چند سال پہلے اپنے ایک دوست کے ساتھ اس کے گاﺅں جانے کا اتفاق ہوا‘ یہ پنجاب کے ایک مشہور گاﺅں کے چودھری ہیں‘ میں ان کے مہمان خانے میں ٹھہرا ہوا تھا‘ سردیوں کے دن تھے‘ میں صبح اٹھا تو مہمان خانے کے صحن میں پنچایت ہو رہی تھی‘میں نے کھڑکی کھولی اور کارروائی دیکھنے لگا‘ ....مزید پڑھئے‎

مجھے چند سال پہلے اپنے ایک دوست کے ساتھ اس کے گاﺅں جانے کا اتفاق ہوا‘ یہ پنجاب کے ایک مشہور گاﺅں کے چودھری ہیں‘ میں ان کے مہمان خانے میں ٹھہرا ہوا تھا‘ سردیوں کے دن تھے‘ میں صبح اٹھا تو مہمان خانے کے صحن میں پنچایت ہو رہی تھی‘میں نے کھڑکی کھولی اور کارروائی دیکھنے لگا‘ ....مزید پڑھئے‎