اسٹیبلشمنٹ ڈویژن کے آئی ٹی ڈیپارٹمنٹ کی لا پرواہی، سرکاری ملازمین تذبذب کا شکار ہو گئے

  جمعہ‬‮ 17 جنوری‬‮ 2020  |  22:59

اسلام آباد (آن لائن)اسٹیبلشمنٹ ڈویژن کا آئی ٹی ڈیپارٹمنٹ لا پرواہی کا شکار جبکہ ویب سائٹ نے سرکاری ملازمین کو ابہام میں ڈال دیا۔ نئے تقرر و تبادلے ویب سائٹ پر اپڈیٹ نہ ہونے کی وجہ سے نئے آفیسر ان کو درست معلومات نہیں مل رہیں۔ میڈیا کے لئے بھی معلومات لینا مشکل ہو گیا ہے۔ویب سائٹ پر تحریر سرکاری فون نمبر سے سرکاری ملازمین تذبزب کا شکار ہیں۔ایک واضع نظام کے تحت ویب سائٹ پر تقرر و تبادلے اپڈیٹ کئے جانے ضروری ہوتے ہیں تاہم کئی کئی روز گزرنے کے بعد اپ ڈیٹ کئے جاتے ہیں۔ویب سائٹ کو اپ


ڈیٹ کرنے کے لئےاگرچہ عملہ تعینات ہے لیکن یا تو انھین اپ ڈیٹ نہ کرنے کی ہدایت ہے یا پھر انھیں پوچنے والا کو ئی نہیں ہے۔متعدد تبادلے ویب سائٹ پر سِرے سے اپ ڈیٹ ہی نہیں کئے جاتے۔حال ہی میں اسٹیبلشمنٹ ڈویژن نے ویب سائٹ کا ڈیزائن تبدیل کیا لیکن معلومات اپ ڈیٹ نہیں کیں۔ویب سائٹ پر دیا گیاسرکاری فون نمبر 9103464 پر رابطہ بھی ناممکن ہے۔۔یوں سرکاری ملازمین اور خود میڈ یا بھی اسٹیبلشمینٹ ڈویژن کی ویب سائٹ سے مستفید نہیں ہوسکتے جبکہ معلومات لینے کے لیے آفس اور استقبالیہ پر بھی موجود عملہ کا عدم تعاون بھی ادارے پر سوالیہ نشان ہے۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

بالا مستری

ہم اگر حضرت عمر فاروقؓ کی شخصیت کو دو لفظوں میں بیان کرنا چاہیں تو ”عدل فاروقی“ لکھ دینا کافی ہو گا‘ حضرت عمرؓ انصاف کے معاملے میں انقلابی تھے‘ یہ عدل کرتے وقت شریعت سے بھی گنجائش نکال لیتے تھے مثلاً حجاز اور شام میں قحط پڑا‘ لوگوں نے بھوک سے تنگ آ کر خوراک چوری کرنا ....مزید پڑھئے‎

ہم اگر حضرت عمر فاروقؓ کی شخصیت کو دو لفظوں میں بیان کرنا چاہیں تو ”عدل فاروقی“ لکھ دینا کافی ہو گا‘ حضرت عمرؓ انصاف کے معاملے میں انقلابی تھے‘ یہ عدل کرتے وقت شریعت سے بھی گنجائش نکال لیتے تھے مثلاً حجاز اور شام میں قحط پڑا‘ لوگوں نے بھوک سے تنگ آ کر خوراک چوری کرنا ....مزید پڑھئے‎