اورنج لائن کس نے بنائی؟ اور یہ کس کا وژن تھا؟  حکومت ڈھٹائی کیساتھ کس کام میں مگن ہے؟ ن لیگ نے حکومت پر سوالات کی بوچھاڑ کر دی ،

  منگل‬‮ 10 دسمبر‬‮ 2019  |  22:23

لاہور (این این آئی) پاکستان مسلم لیگ (ن)کی مرکزی ترجمان مریم اورنگزیب نے کہاکہ شہبازشریف کے منصوبے پر موجودہ حکمران بے شرمی اور ڈھٹائی سے اپنے نام کی تختی لگا رہے ہیں ،عمران وبزدارصاحب کو شہبازشریف کی اورنج لائن سے اتنی شرمندگی ہے کہ اس کا افتتاح بھی نہیں کررہے ۔ مریم اورنگزیب نے اورنج لائن منصوبے کے آزمائشی افتتاح کے حوالے سے اپنے بیان میں کہاکہشہبازشریف نے پانچ میٹروز بنائیں جبکہ نالائقوں اورنااہلوں نے پانچ سال میں پشاور میٹرو کے ایک ارب کے کھڈے کھودے ،عمران صاحب قوم کو بتائیں کہ اورنج لائن کس نے بنائی؟ اور یہ کس


کا وژن تھا؟ دس سال جس میٹرو اور ٹرین پر آپ سیاست کرتے رہے، آج اس کے فیتے کٹوارہے ہیں ۔ انہوںنے کہاکہ عمران صاحب 16 مئی 2018کو شہبازشریف اورنج لائن آزمائشی طورپر چلاچکے ہیں،آپ اور آپ کی حکومت اتنے نالائق ہیں کہ پندرہ ماہ میں اسے شروع نہ کرسکے ،عمران خان صاحب آپ پر شہبازشریف کا خوف طاری ہے، ان کے ترقیاتی منصوبے دیکھ کر حسد میں مبتلا ہوجاتے ہیں ۔پندرہ ماہ ختم ہونے کے باوجود آج بھی نوازشریف، شہبازشریف اور مسلم لیگ (ن)کے منصوبے جاری ہیں۔پندرہ ماہ میں موجودہ نالائق حکمران مسلم لیگ(ن)کے تیارکردہ منصوبوں پر تختیاں لگارہے ہیں ۔ انہوںنے کہاکہ عمران صاحب دانستہ مسلم لیگ (ن)کے ترقیاتی منصوبوں میں تاخیر کررہے ہیں ۔منصوبوں میں تاخیر سے ان کی لاگت کو دانستہ بڑھایا جارہا ہے، تحقیقات ہونی چاہئے ۔نوازشریف اور شہبازشریف کے دیگر منصوبہ جات میں تاخیر سے ملک کو نقصان نہ پہنچائیں۔اورنج لائن نوازشریف اور شہبازشریف کا عوام کے لئے تحفہ ہے ۔نوازشریف اقتدار میں نہ ہوکر بھی عوام کو ریلیف دے رہا ہے ۔مسلم لیگ (ن)پاکستان کی ترقی اور عوام کی خوشحالی کا نام ہے۔ انہوںنے کہاکہ نوازشریف اور شہبازشریف پاکستان اور عوام کے لئے ہمیشہ خوشیاں، آسانیاں اور خوشحالی لائے، آئندہ بھی لاتے رہیں گے۔پاکستان کے ہر شہر کو ایسے تحفے دیتے رہیں گے۔‎


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

بالا مستری

ہم اگر حضرت عمر فاروقؓ کی شخصیت کو دو لفظوں میں بیان کرنا چاہیں تو ”عدل فاروقی“ لکھ دینا کافی ہو گا‘ حضرت عمرؓ انصاف کے معاملے میں انقلابی تھے‘ یہ عدل کرتے وقت شریعت سے بھی گنجائش نکال لیتے تھے مثلاً حجاز اور شام میں قحط پڑا‘ لوگوں نے بھوک سے تنگ آ کر خوراک چوری کرنا ....مزید پڑھئے‎

ہم اگر حضرت عمر فاروقؓ کی شخصیت کو دو لفظوں میں بیان کرنا چاہیں تو ”عدل فاروقی“ لکھ دینا کافی ہو گا‘ حضرت عمرؓ انصاف کے معاملے میں انقلابی تھے‘ یہ عدل کرتے وقت شریعت سے بھی گنجائش نکال لیتے تھے مثلاً حجاز اور شام میں قحط پڑا‘ لوگوں نے بھوک سے تنگ آ کر خوراک چوری کرنا ....مزید پڑھئے‎