مکافات عمل یا ۔۔۔!!! جب مشرف نے نواز دورمیں بیرون ملک علاج کی درخواست کی تھی اس وقت لیگی حکومت کا کیا اصولی موقف تھا؟ حیرت انگیز انکشافات‎

  بدھ‬‮ 13 ‬‮نومبر‬‮ 2019  |  15:23

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)سینئر صحافی عارف حمید بھٹی نے نجی ٹی وی پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ آج انسانی ہمدردی مانگنے والے نواز شریف ،ماضی میںجب پرویز مشرف بیمار ہوئے تھے ان کا کیسے مذاق اڑایا کرتے تھے ،اس حوالہ سے انہوں نے پروگرام کے دوران کچھ ویڈیو ز بھی چلائیں جس میں سعد رفیق کاپرویز مشرف کی درخواست پر کہنا تھا کہ انوکھا مریض آئی سی یو میں لیٹا ہوا ہے اور عدالت بھی اپنے پائوں پر چل کر جاتا ہے ، یہ ڈرامے بازی مشرف صاحب بند کریں اور بیرون ملک علاج کیلئے جانے کا


فیصلہ عدالت سے ہو کر جاتا ہے حکومت سے نہیں گزرتا ، اسی طرح ایک اوربیان میں ن لیگ کے صدر سعد رفیق کا کہنا تھا کہ پرویز مشرف کی انجیو گرافی کیلئے انہیں پاکستان سے باہر بھیجنا ہے تو مجھے بتائیں جتنے وہ لوگ جو جیلوں میں بند اور دل کے مریض ہیں کیا انہیں بھی بیرون ملک علاج کیلئے بھیج دیں ؟ پرویز مشرف انوکھا لاڈلہ نہیں ۔ جبکہ ن لیگ کے سینئر رہنما خواجہ آصف کا پرویز مشرف سے متعلق کہنا تھا کہ وہ ہم سے معافیاںمانگتے ہیں ترلے کرتے ہیں کہ مجھے علاج کے لئے بیرون ملک جانے دیا جائے ۔ جبکہ ن لیگی رہنما پرویز رشید کا ماضی میں کہنا تھا کہ قانون میں ایسی کوئی گنجائش نہیں کہ کوئی ملزم علاج کیلئے اپنے ملک سے باہر چلا جائے ۔ ان بیانات کو مدنظر رکھتے ہوئے عارف حمید بھٹی کا کہنا تھا کہ یہ جو پس پردہ بیٹھ کر ملک چلا رہے ہیںیہ ان کیلئے بھی پیغام ہے، یہ تو مجرم جارہا ہے اس پر میں کچھ زیادہ کہوں تو لوگوں کو برا لگ جائے گا ۔‎‎


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

ڈیڈ اینڈ

ارنسٹ ہیمنگ وے نوبل انعام یافتہ ادیب تھا اور یہ دہائیوں سے انسانی فکر کو متاثر کررہا ہے‘ ہم میں سے کم لوگ جانتے ہیں ہیمنگ وے نے اپنا کیریئر صحافی کی حیثیت سے شروع کیا تھا‘ یہ وار رپورٹر تھا‘ محاذ جنگ سے ڈائری لکھتا تھا اور لاکھوں لوگ اس کی تحریروں کا انتظار کرتے تھے‘ اس ....مزید پڑھئے‎

ارنسٹ ہیمنگ وے نوبل انعام یافتہ ادیب تھا اور یہ دہائیوں سے انسانی فکر کو متاثر کررہا ہے‘ ہم میں سے کم لوگ جانتے ہیں ہیمنگ وے نے اپنا کیریئر صحافی کی حیثیت سے شروع کیا تھا‘ یہ وار رپورٹر تھا‘ محاذ جنگ سے ڈائری لکھتا تھا اور لاکھوں لوگ اس کی تحریروں کا انتظار کرتے تھے‘ اس ....مزید پڑھئے‎