اگلاوزیراعظم کون ہو گا؟وزارت عظمیٰ کی دوڑ میں شامل شاہد خا قان عباسی نے خاموشی توڑ دی

23  جولائی  2017

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)وزیراعظم نے خود کو خاندان سمیت احتساب کیلئے پیش کیا اور تحفظات کے باوجود ہر فیصلہ قبول کیا،وزیر داخلہ کی کسی اجلاس میں عدم شرکت کا یہ مطلب نہیں کہ کوئی اختلاف یا ناراضگی ہے، عوام کے وزیراعظم نوازشریف ہی ہیں۔ تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیر پٹرولیم شاہد خاقان عباسی نے میڈیا نمائندوں سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے

کہ عوام کے وزیراعظم نوازشریف ہی ہیں۔ وزیراعظم نے خود کو خاندان سمیت احتساب کیلئے پیش کیا اور تحفظات کے باوجود ہر فیصلہ قبول کیا۔سپریم کورٹ کافیصلہ جوبھی ہو،اس پر عملدرآمد کریں گے۔ وفاقی وزیر کا کہناتھا کہ مسلم لیگ ن میں کوئی اختلافات نہیں، ہر آدمی ہر اجلاس میں نہیں آتا،میں بھی کئی اجلاسوں میں نہیں آتا۔وزیر داخلہ کی کسی اجلاس میں عدم شرکت کا یہ مطلب نہیں کہ کوئی اختلاف یا ناراضگی ہے۔ ان کا کہناتھا کہ چودھری نثار پرانے دوست اور پارٹی کے رکن ہیں۔ شاہد خاقان عباسی کا کہناتھا کہ چودھری نثار نےجوکچھ بتاناہوا پریس کانفرنس میں بتادیں گے،وزیر پٹرولیم نے کہا کہ اگر قطر پر پابندیاں لگیں تو ایل این جی کے متبادل انتظامات کرنا ہوں گے۔وفاقی وزیر کا کہناتھا کہ مسلم لیگ ن میں کوئی اختلافات نہیں، ہر آدمی ہر اجلاس میں نہیں آتا،میں بھی کئی اجلاسوں میں نہیں آتا۔وزیر داخلہ کی کسی اجلاس میں عدم شرکت کا یہ مطلب نہیں کہ کوئی اختلاف یا ناراضگی ہے۔ ان کا کہناتھا کہ چودھری نثار پرانے دوست اور پارٹی کے رکن ہیں۔ شاہد خاقان عباسی کا کہناتھا کہ چودھری نثار نےجوکچھ بتاناہوا پریس کانفرنس میں بتادیں گے،وزیر پٹرولیم نے کہا کہ اگر قطر پر پابندیاں لگیں تو ایل این جی کے متبادل انتظامات کرنا ہوں گے۔

موضوعات:



کالم



مرحوم نذیر ناجی(آخری حصہ)


ہمارے سیاست دان کا سب سے بڑا المیہ ہے یہ اہلیت…

مرحوم نذیر ناجی

نذیر ناجی صاحب کے ساتھ میرا چار ملاقاتوں اور…

گوہر اعجاز اور محسن نقوی

میں یہاں گوہر اعجاز اور محسن نقوی کی کیس سٹڈیز…

نواز شریف کے لیے اب کیا آپشن ہے (آخری حصہ)

میاں نواز شریف کانگریس کی مثال لیں‘ یہ دنیا کی…

نواز شریف کے لیے اب کیا آپشن ہے

بودھ مت کے قدیم لٹریچر کے مطابق مہاتما بودھ نے…

جنرل باجوہ سے مولانا کی ملاقاتیں

میری پچھلے سال جنرل قمر جاوید باجوہ سے متعدد…

گنڈا پور جیسی توپ

ہم تھوڑی دیر کے لیے جنوری 2022ء میں واپس چلے جاتے…

اب ہار مان لیں

خواجہ سعد رفیق دو نسلوں سے سیاست دان ہیں‘ ان…

خودکش حملہ آور

وہ شہری یونیورسٹی تھی اور ایم اے ماس کمیونی کیشن…

برداشت

بات بہت معمولی تھی‘ میں نے انہیں پانچ بجے کا…

کیا ضرورت تھی

میں اتفاق کرتا ہوں عدت میں نکاح کا کیس واقعی نہیں…