ایم کیو ایم کے وفد کی ملاقات،نوازشریف نے جواب دیدیا

  پیر‬‮ 24 اگست‬‮ 2015  |  18:45

اسلام آباد (نیوزڈیسک) وزیراعظم محمد نوازشریف نے کہا ہے کہ کراچی آپریشن کے اچھے نتائج نکل رہے ہیں . یہ آپریشن آگے بڑھتا رہے گا۔وہ پیر کو یہاں وزیراعظم آفس سے ایم کیوایم کے وفد سے بات چیت کر رہے تھے جس نے ڈاکٹر فاروق ستارکی قیادت میں ان سے ملاقات کی۔ملاقات میں حکومت اور ایم کیو ایم کے درمیان ثالث مولانا فضل الرحمان ،وفاقی وزیرخزانہ محمد اسحاق ڈار اور دیگر رہنما بھی موجود تھے ایم کیوایم کے وفد میں فاروق ستار،وسیم اختر،بیرسٹر سیف ،کنور نوید جمیل و دیگر شریک تھے۔وزیراعظم نے واضح طو رپر کہا کہ کراچی آپریشن سے


حالات معمول پر آرہے ہیں ، یہ آپریشن پورے عزم سے شروع کیا اور مثبت نتائج سامنے آرہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ پاکستان میں فرقہ وارانہ عناصر کی یہاں کوئی گنجائش نہیں،فرقہ واریت کو جڑ سے اکھاڑپھینکیں گے۔فرقہ وارانہ عناصر کو پنپنے نہیں دیں گے۔اتفاق رائے سے جمہوری حکومت نے فوجی عدالتیں بنائیں او رسپریم کورٹ نے ان کی توثیق کی اور اب عدالتوں میں معصوم شہریوں کو نشانہ بنانے والے کیفر کردار کو پہنچیں گے۔وزیراعظم نے واضح کیا کہ آپریشن کسی سیاسی جماعت کے خلاف نہیں کیا جا رہا بلکہ صرف مجرموں کے خلاف کیا جارہا ہے،ایم کیو ایم گلہ کرتی ہے تاہم کراچی آپریشن کا سب سے زیادہ فائدہ بھی ایم کیو ایم کو ہوگا۔اس موقع پر ایم کیو ایم کے ارکان نے وزیراعظم کو اپنے تحفظات سے آگاہ کیا اور کہا کہ اس آپریشن میں صرف متحدہ کو نشانہ بنایا جارہا ہے جبکہ وزیرا عظم نے کہا کہ آپریشن میں صرف مجرموں کو نشانہ بنا رہے ہیں ۔وزیراعظم نے کہا کہ آپریشن صر ف مجرموں کے خلاف ہورہا ہے ہے جس کا جائز گلہ ہے سنیں گے ¾کراچی آپریشن کی تعریف کراچی نہیں پورے ملک والے کر رہے ہیں، یہ آگے بڑھ رگہا ہے اور آگے بڑھتا رہے گا اس آپریشن کے نتائج انشاءاللہ اچھے نکلیں گے۔انہوں نے کہا کہ تمام جماعتوں آپریشن ضرب عضب شروع کیا او رپورے ملک میں دہشت گردوں کا تعاقب کر رہے ہیں، فوج آگے بڑھ کر اہم کردار اد اکر رہی ہے۔حکومت نے مسلح جتھوں کے خلاف آپریشن کا فیصلہ کیا اور فرقہ واریت کے خلاف بھی آپریشن شروع کر دیا گیا ہے تاکہ ملک میں پائیدار امن و استحکام قائم کیا جا سکے

loading...