پاکستان کا آئندہ ہفتے ایسا منصوبہ کہ بھارت کی نیندیں اڑ گئیں

  منگل‬‮ 11 اکتوبر‬‮ 2016  |  10:45

اسلام آباد (آئی این پی )پاکستان کا آئندہ ہفتے ایسا منصوبہ کہ بھارت کی نیندیں اڑ گئیں،اقوام متحدہ میں مستقل مندوب ملیحہ لودھی نے کہا ہے کہ کشمیر پر اقوام متحدہ کی قراردادوں پرعمل درآمد کیلئے دباؤبڑھارہے ہیں، اگلے چند ہفتوں میں سیکیورٹی کونسل ارکان سے مشاورت ہوگی،وزیراعظم نے عالمی لیڈروں کوبھی مسئلہ کشمیر پرنوٹس لینے کاکہاتھا،مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں بندہونی چاہئیں، پاک بھارت کشیدگی سے خطے کوخطرہ لاحق ہوسکتا ہے، بھارتی کشیدگی پرامریکا میں بھی تشویش پائی جاتی ہے۔وہ پیر کو نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کر رہی تھیں۔ ملیحہ لودھی نے


کہا کہ کشمیر پر اقوام متحدہ کی قراردادوں پرعمل درآمد کیلئے دباؤبڑھارہے ہیں، اگلے چند ہفتوں میں سیکیورٹی کونسل ارکان سے مشاورت ہوگی، اقوام متحدہ کی قراردادوں پرعمل کے لئے ارکان سے مشاورت ہوگی،انہوں نے کہا کہ مسئلہ کشمیر سے متعلق مختلف فورم پر کوششیں جاری ہیں، مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں بندہونی چاہئیں۔اگلے چند ہفتوں میں سیکیورٹی کونسل ارکان سے مشاورت ہوگیانہوں نے کہا کہ پاک بھارت کشیدگی سے خطے کوخطرہ لاحق ہوسکتا ہے، بھارتی کشیدگی پرامریکا میں بھی تشویش پائی جاتی ہے۔انہوں نے کہا کہ بانکی مون نے2 پاکستانی فوجیوں کی شہادت پرافسوس کااظہار کیا، بھارت کشیدگی بڑھارہاہے، کشیدگی سے پوری دنیاکے امن کوبھی خطرہ ہے۔ جبکہ دوسری جانب اقوام متحدہ میں پاکستان کی سفیر ملیحہ لودھی نے کہا ہے کہ سلامتی کونسل میں مستقل نشستیں بنیادی طور پر قومی نشستیں ہیں۔ اس عالمی ادارے میں کوئی اضافی مستقل نشست نہیں ہونی چاہیے۔ سلامتی کونسل میں اصلاحات کے معاملے پر اقوام متحدہ میں بین الحکومتی بحث کا دوبارہ آغاز ہوگیا ہے۔ پاکستانی سفیر ملیحہ لودھی نے سلامتی کونسل کے مستقل ارکان کی تعداد میں اضافے کے خلاف پاکستان کا کیس موثر انداز میں پیش کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ مستقل ارکان کی تعداد بڑھانے سے صرف کچھ ممالک کے ذاتی مفادات کی ہی خدمت ہوگی۔پاکستان مستقل نشستوں کی تعداد بڑھانے کی سختی سے مخالفت کرتا ہے۔ سلامتی کونسل کو مزید جمہوری بنانے اور زیادہ نمائندگی کے لیے اس بات کو یقینی بنایا جائے کہ توسیع کے لیے کونسل کی نوعیت اور اثر انگیزی پر کوئی سمجھوتہ نہیں ہوگا


موضوعات: