اسرائیلی وزیراعظم کی ہٹ دھرمی غزہ پر مزید حملوں کی دھمکی دیدی

  بدھ‬‮ 12 مئی‬‮‬‮ 2021  |  17:34

یروشلم،غزہ (این این آئی)اسرائیلی وزیراعظم نیتن یاہو نے غزہ پر حملوں کی شدت میں مزید اضافے کی دھمکی دے دی ہے۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق نیتن یاہو نے اپنے دفتر سے جاری ہونے والے ویڈیو بیان میں کہا کہ اسرائیلی فوج نے غزہ میں حماس کے خلاف سینکڑوں حملے کیے ہیںاور ہم اپنے حملوں کی شدت میں مزید اضافہ کریں گے۔ نیتن یاہو کے مطابق ہم انہیں(حماس) اس طریقے سے ہٹ کریں گے جس کی انہیں توقع بھی نہیں۔ افرانس کے وزیر خارجہ نے اپنے بیان میں کہا کہ تمام فریقین کو چاہیے کہ وہ نفرت، اشتعال انگیزی پھیلانے سے


خود کو روکیں تاکہ اس تشدد کا خاتمہ کیا جاسکے جو سب سے زیادہ فلسطینی اور اسرائیلی آبادی کو متاثر کر رہا ہے۔فرانس کے نائب وزیر خارجہ جین بیپٹسٹ لیموئنے نے فرانسیسی پارلیمنٹ میں اراکین اسمبلی سے خطاب میں کہا کہ اسرائیل فلسطین کی کارروائیوں پر اپنا شدید ردعمل ظاہر کرے۔ یہ بات ہم بلکل واضح کہتے ہیں کہ اسرائیلی حکام کی جانب سے طاقت کا متوازی استعمال کیا جائے۔دوسری جانب فلسطینی تنظیم حماس نے اسرائیلی جارحیت کے خلاف بھرپور جوابی کارروائی کرتے ہوئے اسرائیل کے جنوبی ضلع میں ساحلی شہرعسقلان کو رکٹ حملوں سے نشانہ بنایا جس کے مطابق تیل پائپ لائن اور آئل ریفائنری تباہ ہوگئی۔صنعتی شہر ہالون میں بھی راکٹ حملوں میں ٹی وی اسٹیشن کی عمارت تباہ ہوگئی ،حماس کے حملوں میں دواسرائیلی ہلاک ہونے کی خبر آئی ہے۔اطلاعات ہیں کہ کئی شہروں میں ہنگامے اورکشیدگی کے دوران متعدد گاڑیوں کو نذرآتش کردیا گیا ہے۔حماس نے تل ابیب پر مزید دو سو راکٹ داغے ہیں جس سے تل ابیب میں حفاظتی الارم بج اٹھے۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

روکا روکی کا کھیل

میں آج سے چھ سال پہلے بائی روڈ اسلام آباد سے ملتان گیا تھا‘ وہ سفر مشکل اور ناقابل برداشت تھا‘ رات لاہور رکنا پڑا‘ اگلی صبح نکلے تو ملتان پہنچنے میں سات گھنٹے لگ گئے‘ سڑک خراب تھی اور اس کی مرمت جاری تھی لہٰذا گرمی‘ پسینہ اور خواری بھگتنا پڑی‘ ہفتے کے دن چھ سال بعد ایک بار ....مزید پڑھئے‎

میں آج سے چھ سال پہلے بائی روڈ اسلام آباد سے ملتان گیا تھا‘ وہ سفر مشکل اور ناقابل برداشت تھا‘ رات لاہور رکنا پڑا‘ اگلی صبح نکلے تو ملتان پہنچنے میں سات گھنٹے لگ گئے‘ سڑک خراب تھی اور اس کی مرمت جاری تھی لہٰذا گرمی‘ پسینہ اور خواری بھگتنا پڑی‘ ہفتے کے دن چھ سال بعد ایک بار ....مزید پڑھئے‎