جھوٹا ڈرامہ حقیقت بن گیا 9 اپریل 2020 کو اپنی موت کا جھوٹا ڈرامہ رچانے والی مشہور یوٹیوبر 9 اپریل 2021 کو حقیقت میں انتقال کر گئی

  بدھ‬‮ 14 اپریل‬‮ 2021  |  15:58

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)مصر میں پیش آئے ایک واقعے نے انٹرنیٹ بلاگنگ سے وابستہ لوگوں کو ناصرف افسردہ کر دیا، بلکہ محض شہرت کے حصول کیلئے بھیانک جھوٹ بولنے والوں کیلئے عبرت کا باعث بھی بن گیا۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق مصر سے تعلق رکھنےوالی مشہور یوٹیوب بلاگر ام ضیاد اپنی موت کے حوالے سے کیے گے جھوٹے ڈرامے کے ٹھیک ایک سال بعد حقیقت میں انتقال کر گئی۔ام ضیاد نے 9 اپریل 2020 کو اپنی موت کا جھوٹا ڈرامہ رچا کر ویڈیو یوٹیوب پر ڈالی تھی۔ ویڈیو کے حوالے سے ام ضیادنے موقف اختیار کیا کہ وہ دیکھنا چاہتی تھی


کہ اس کی موت پر شوہر اور بچوں کا کیا ردعمل ہوگا۔ اس ویڈیو کے حوالے سے ام ضیاد کو کافی تنقید کا بھی سامنا کرنا پڑا تھا۔جبکہ اب معلوم ہوا ہے کہ اس واقعے کے ٹھیک ایک سال بعد، یعنی 9 اپریل 2021 کو ام ضیاد حقیقت میں انتقال کر گئی۔اس کے بھائی کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ اس کی بہن کمرے میں گیس بھر جانے کی وجہ سے انتقال کر گئی۔ کچھ روز قبل بھی ام ضیادنے اپنی ایک ویڈیو میں بتایا تھا کہ کمرے میںگیس بھر جانے اور آکسیجن کی کمی کی وجہ سے اس کی طبیعت خراب ہے، اسے سانس لینے میں کافی دشواری ہے۔ ام ضیادکے انتقال پر سوشل میڈیا صارفین نے رنج و غم کا اظہار کرتے ہوئے ان کی مغفرت کیلئے دعا کی ہے۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

درمیان

یہ ایک ڈاکٹر کی کہانی ہے‘ ڈاکٹر صاحب اس وقت آسٹریلیا میں ہیں اور یہ وہاں ایسی شان دار زندگی گزار رہے ہیں جس کا ان کے کسی کلاس فیلو نے خواب تک نہیں دیکھا تھا‘ ہم سب لوگ زندگی میں ٹاپ کرنا چاہتے ہیں‘ ہم ہر کلاس میں اول آنا چاہتے ہیں‘ ہم بازار کا مہنگا ترین لباس خریدنا ....مزید پڑھئے‎

یہ ایک ڈاکٹر کی کہانی ہے‘ ڈاکٹر صاحب اس وقت آسٹریلیا میں ہیں اور یہ وہاں ایسی شان دار زندگی گزار رہے ہیں جس کا ان کے کسی کلاس فیلو نے خواب تک نہیں دیکھا تھا‘ ہم سب لوگ زندگی میں ٹاپ کرنا چاہتے ہیں‘ ہم ہر کلاس میں اول آنا چاہتے ہیں‘ ہم بازار کا مہنگا ترین لباس خریدنا ....مزید پڑھئے‎