وزیراعظم کے بیان نے پوری دنیا میں تہلکہ مچا دیا، جاپان اور جرمنی کی سرحدوں کے درمیان نو ہزار کلو میٹر کا فاصلہ ہے‘ اوراگروضاحت مان لیں کہ وزیراعظم جاپان نہیں فرانس کہنا چاہتے تھے اور یہ سلپ آف ٹنگ تھی تو صورت حال مزید گھمبیر ہو جائے گی کیونکہ ۔۔! جاوید چودھری کا تجزیہ‎

  منگل‬‮ 23 اپریل‬‮ 2019  |  21:57

وزیراعظم کے کل کے بیان نے پوری دنیا میں تہلکہ مچا دیا، دنیا کا کہنا ہے ہمارے وزیراعظم یہ بھی نہیں جانتے جاپان اور جرمنی کی سرحدوں کے درمیان نو ہزار کلو میٹر کا فاصلہ ہے‘ شیریں مزاری نے آج قومی اسمبلی میں اس بیان کی وضاحت کی، ہم اگر شیریں مزاری کی یہ وضاحت مان لیں کہ وزیراعظم جاپان نہیں فرانس کہنا چاہتے تھےاور یہ سلپ آف ٹنگ تھی تو صورت حال مزید گھمبیر ہو جائے گی کیونکہ عالمی جنگ کے خاتمے کے چوہترسال بعد آج بھی فرانس اورجرمنی کے بارڈر پر کوئی انڈسٹریل اسٹیٹ نہیں یوں عذر گناہ


بد تر از گناہ ہو جائے گا۔قومی اسمبلی کے ساتھ ساتھ صوبائی اسمبلیوں میں بھی ہنگامے شروع ہو گئے ہیں‘ یہ کھیل کہاں تک جائے گا۔


زیرو پوائنٹ

بلیک سٹارٹ

آپ بجلی کے تازہ ترین بریک ڈائون کو سمجھنے کے لیے گاڑی کی مثال لیں‘ گاڑی کو انجن چلاتا ہے لیکن ہم انجن کو سٹارٹ کرنے کے لیے اسے بیٹری کے ذریعے کرنٹ دیتے ہیں‘ بیٹری کا کرنٹ انجن کو سٹارٹ کر دیتا ہے اور انجن سٹارٹ ہو کر گاڑی چلا دیتا ہے‘ آپ اب فرض کیجیے انجن راستے میں ....مزید پڑھئے‎

آپ بجلی کے تازہ ترین بریک ڈائون کو سمجھنے کے لیے گاڑی کی مثال لیں‘ گاڑی کو انجن چلاتا ہے لیکن ہم انجن کو سٹارٹ کرنے کے لیے اسے بیٹری کے ذریعے کرنٹ دیتے ہیں‘ بیٹری کا کرنٹ انجن کو سٹارٹ کر دیتا ہے اور انجن سٹارٹ ہو کر گاڑی چلا دیتا ہے‘ آپ اب فرض کیجیے انجن راستے میں ....مزید پڑھئے‎