ثاقب نثار کی جانب سے بنائے گئے ڈیم فنڈ میں موجود 11ارب روپے کا کیا کیا گیا؟حکومت نے خود ہی بتا دیا

  منگل‬‮ 15 اکتوبر‬‮ 2019  |  16:12

لاہور( این این آئی)وفاقی وزیر برائے آبی وسائل فیصل واڈا نے کہا ہے کہ مولانا کرائے پر دستیاب ہیں اور ان پر آنے والے دنوں میں بھرپور بات ہو گی ،ڈیمز کیلئے فنڈ اس وقت کے چیف جسٹس نے بنایا تھا اوراس میں موجود تقریباً11ارب روپے کی رقم کی سرمایہ کاری کا فیصلہ سپریم کورٹ نے کیا ،حکومت نے اسے ہاتھ تک نہیں لگایا ۔آنے والے دنوں میں مسائل پر قابو پا لیا جائے گا ، آنکھوں کی بیماری میں مبتلا بچے کے علاج معالجے تمام اخراجات براشت کروں گا ، والد نے علاج معالجے کیلئے اپنی جوورکشاپ فروخت کی


اسے بھی خرید کر واپس دیں گے ۔ ان خیالات کا اظہارانہوں نے واپڈا ہسپتال میں آنکھوں کی بیماری میں مبتلابچے واجد علی کی عیادت اور ڈاکٹروں سے معلومات حاصل کرنے کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔ فیصل واڈا نے کہا کہ میڈیا کے شکر گزار ہیں جو بچے کی بیماری کوسامنے لایا۔ہماری حکومت میں عام لوگ وی وی آئی پی ہیں ۔بچے کی بیماری میں غفلت ہوئی اور اب اس کا سٹیج چار کا کینسر ہے، بچے کو شوکت خانم میں داخل کرارہے ہیں ۔اڑھائی سال پہلے معلوم ہوجاتا تو بچے کا علاج آسان تھا۔ انہوں نے کہا کہ بچے کے علاج معالجے کے تمام اخراجات برداشت کروں گا ،والد ین کوعلاج معالجے کے دوران یہاں رہنے کے لئے رہائش دی جائے گی جبکہ ان کے دوسرے بچوں کو بھی یہاں لارہے ہیں تاکہ ان کا بھی چیک اپ کیا جا سکے ۔ انہوں نے کہا کہ اگر کسی نے بچے کے والد کی مدد کرنی ہے تو خود بچے کے والد سے رابطہ کرے ،کسی بلائنڈاکائونٹ میں امداد ٹرانسفر نہ کی جائے ۔ انہوں نے اعلان کیا گیا کہ ایک فنڈ بناقائم کیا جائے گا جو کارخیر کے کاموں میں مستحقین کی امداد کرے گا۔انہوں نے ڈیمز فنڈ کے حوالے سے سوال کے جواب میں کہا کہ یہ فنڈ اس وقت کے چیف جسٹس ثاقب نثار نے بنایا تھا ۔ 10سے 11ارب روپے کے اکائونٹس کا اختیاربھی سپریم کورٹ کے پاس ہے او راس کی سرمایہ کاری کے حوالے سے فیصلہ بھی سپریم کورٹ نے کیا ہے ،حکومت نے ان فنڈز کو ہاتھ تک لگایا ،جب ہمیں ڈیمز کے لئے فنڈز کی ضرورت ہوگی توسپریم کورٹ سے اس کی دخواست کی جائے گی ۔ انہوں نے مہنگائی کے حوالے سے سوال کے جواب میں کہا کہ سب کو اس کی وجوہات کا پتہ ہے لیکن آنے والے دنوںمیں مسائل پر قابو پا لیا جائے گا ۔ انہوں نے مولانافضل الرحمان کے مارچ اور دھرنے کے حوالے سے سوال کے جواب میں کہا کہ ’’مولانا کرائے پر دستیاب ہیں ‘‘ لیکن آج اس حوالے سے کوئی بات نہیں کروں گا بلکہ آنے والے دنوں میں اس پر بھرپو ربات ہو گی ۔

موضوعات:

loading...