ٹنڈولکر کو آئوٹ کرنے کا افسوس ہے، شعیب اختربدستور بھارتیوں کی خوشنودی میں سرگرم

  منگل‬‮ 19 مئی‬‮‬‮ 2020  |  23:53

لاہور( آن لائن )شعیب اختر بدستور بھارتیوں کی خوشنودی میں سرگرم ہیں،انہوں نے اعتراف کیا کہ ابھی تک ورلڈ کپ 2003 میں سچن ٹنڈولکر کو98پر آئوٹ کرنے کا افسوس ہے،وہ کہتے ہیں کہ میں انہیں اپنے بائونسر پرچھکا لگاتا دیکھنا چاہتا تھا تھا لیکن وہ کیچ دے بیٹھے۔ تفصیلات کے مطابق ایسے وقت میں جب پوری بھارتی برادری شاہد آفریدی کے مقبوضہ کشمیر پر دیئے گئے بیان پر متحد ہوکر پاکستان کے خلاف نفرت آمیز بیانات دے رہی ہے وہیں سابق پاکستانی فاسٹ بالر شعیب اختر بھارت نوازی میں مشغول ہیں۔انہوں نے یہاں تک اعتراف کرلیا کہ وہ ورلڈ کپ 2003


میں سچن ٹنڈولکر کو اپنی ہی ٹیم کے خلاف سنچری سکور کرتا دیکھنا چاہتے تھے۔یاد رہے کہ سنچورین میں کھیلے گئے اس مقابلے میں پاکستان نے سعید انور کی سنچری سے تقویت پاکر 7وکٹوں کے نقصان پر273رنز سکور کیے تھے،جواب میں بھارت نے سچن ٹنڈولکر کے98رنز کی بدولت یہ میچ 6وکٹوں سے جیت لیا تھا،شعیب اختر کو اابھی تک اس بات کا افسوس ہے کہ انہوں نے سچن ٹنڈولکر کو آٹ کیو ں کیا۔ایک انٹر ویو میں انہوں نے کہا کہ مجھے سچن ٹنڈولکر کے98رنز پر آٹ ہونے کا بہت زیادہ افسوس ہوا تھا،وہ ایک خاص اننگز تھی،انہیں سنچری لازمی سکور کرنا چاہیئے تھی اورمیں خود بھی یہی چاہتا تھا کہ وہ ایسا کریں،جس بانسر پر وہ آٹ ہوئے میری خواہش تھی کہ وہ اس پر چھکا جڑتے۔یاد رہے کہ یہ پہلا موقع نہیں جب شعیب اختر نے بھارتیوں کو خوش کرنے کے لیے ایسا بیان دیا ہو،سابق بھارتی اوپنر وریندر سہواگ بھی کئی مرتبہ شعیب اختر کا مذاق اڑا چکے ہیں کہ وہ دولت کمانے کے لیے بھارتی شائقین کو خوش کرتے ہیں ۔شعیب اختر کے یوٹیوب چینل سبسکرائیبرزمیں بہت بڑی تعدادبھارتیوں کی ہے۔


موضوعات: