ملک بھر میں نجی تعلیمی ادارے کھل گئے، طلبہ کو اہم ہدایات جاری

  ہفتہ‬‮ 15 اگست‬‮ 2020  |  18:40

اسلام آباد(آن لائن) آل پرائیویٹ سکولز اینڈ کالجز ایسوسی ایشن نے ملک بھر میں 15 اگست سے نجی تعلیمی ادارے کھول دیئے ہیں۔ وفاقی دارالحکومت میں بورڈ امتحانات دینے والے 30 فیصد طلبہ کو ابتدائی مرحلے میں سکول و کالجز میں حاضری یقینی بنانے کی ہدایت جاری کر دی جبکہ مرحلہ وار 15 ستمبر تک تمام کلاسوں کا اجراء کر دیا جائے گا۔ گزشتہ روز آل پاکستان پرائیویٹ سکولز و کالجز کے صدر ملک ابرار حسین نےاپنے ایک جاری کردہ بیان میں کہا کہ خیبرپختونخوا میں 90 فیصد بلوچستان میں 70 فیصد نجی تعلیمی ادارے کھول دیئے گئے ہیں جبکہ


اسلام آباد میں بھی 15 اگست سے نجی تعلیمی ادارے کھول دیئے گئے ہیں اور ہفتہ کو دیہاتی علاقوں میں اس کا باقاعدہ آغاز کر دیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ وہ حکومتی ایس او پیز پر مکمل عملدرآمد کروا رہے ہیں اور اس حوالے سے تین مرحلوں میں بچوں کی کلاسز کھول دیں جائیں گی۔ پہلے مرحلے میں صرف بورڈ امتحانات والے 30 فیصد بچوں کو سکول و کالجز آنے کی اطلاع دی گئی ہے۔ زیادہ چھوٹی کلاسوں والے بچے 15 ستمبر کے بعد سکولوں میں بلائے جائیں گے۔ انہوں نے وزارت تعلیم و تربیت کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے ہمیں اس حوالے سے تنگ نہیں کیا ہے اور نجی سکولز و کالجز بھی بچوں کی تعلیمی ضیاع کا خیال رکھتے ہوئے حکومتی ہدایات پر سختی سے عمل پیرا ہوں گے۔  آل پرائیویٹ سکولز اینڈ کالجز ایسوسی ایشن نے ملک بھر میں 15 اگست سے نجی تعلیمی ادارے کھول دیئے ہیں۔ وفاقی دارالحکومت میں بورڈ امتحانات دینے والے 30 فیصد طلبہ کو ابتدائی مرحلے میں سکول و کالجز میں حاضری یقینی بنانے کی ہدایت جاری کر دی جبکہ مرحلہ وار 15 ستمبر تک تمام کلاسوں کا اجراء کر دیا جائے گا۔ گزشتہ روز آل پاکستان پرائیویٹ سکولز و کالجز کے صدر ملک ابرار حسین نے اپنے ایک جاری کردہ بیان میں کہا کہ خیبرپختونخوا میں 90 فیصد بلوچستان میں 70 فیصد نجی تعلیمی ادارے کھول دیئے گئے ہیں جبکہ اسلام آباد میں بھی 15 اگست سے نجی تعلیمی ادارے کھول دیئے گئے ہیں


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

بالا مستری

ہم اگر حضرت عمر فاروقؓ کی شخصیت کو دو لفظوں میں بیان کرنا چاہیں تو ”عدل فاروقی“ لکھ دینا کافی ہو گا‘ حضرت عمرؓ انصاف کے معاملے میں انقلابی تھے‘ یہ عدل کرتے وقت شریعت سے بھی گنجائش نکال لیتے تھے مثلاً حجاز اور شام میں قحط پڑا‘ لوگوں نے بھوک سے تنگ آ کر خوراک چوری کرنا ....مزید پڑھئے‎

ہم اگر حضرت عمر فاروقؓ کی شخصیت کو دو لفظوں میں بیان کرنا چاہیں تو ”عدل فاروقی“ لکھ دینا کافی ہو گا‘ حضرت عمرؓ انصاف کے معاملے میں انقلابی تھے‘ یہ عدل کرتے وقت شریعت سے بھی گنجائش نکال لیتے تھے مثلاً حجاز اور شام میں قحط پڑا‘ لوگوں نے بھوک سے تنگ آ کر خوراک چوری کرنا ....مزید پڑھئے‎